یورپ کیساتھ باہمی تعاون میکانیزم حتمی مرحلے پر ہے: ایران

تہران، 1 اکتوبر، ارنا – ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ ہم یورپ کے ساتھ زیادہ مذاکرات کے بعد ایران کے تمام مطالبات کی فراہمی کے لئے اتفاق کر رہے ہیں جس میکانیزیم حتمی مرحلے پر ہے.

یہ بات " بہرام قاسمی" نے پیر کے روز اپنی ہفتہ وار پریس بریفنگ کے موقع پر ملکی اور غیرملکی میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے کہا کہ جوہری مذاکرات سے امریکی علیحدگی کے بعد یورپی یونین، چین اور روس کے ساتھ مذاکرات کا آغاز کیا گیا اور ابھی بھی جاری ہے۔
قاسمی نے کہا کہ ہم زیادہ مذاکرات اور دوروں کے بعد بعض شعبوں میں باہمی اتفاق کرنے پر قریب ہیں اور نیویارک میں ایران اور گروپ 4+1 کے وزرائے خارجہ کے درمیان حالیہ نشست کے بعد تمام منصوبوں کی مکملی پر اتفاق کیا گیا جسے کے نتیجے میں امریکی خلاف ورزی ناکام ہوگی.
انہوں نے مزید کہا کہ امریکہ ایران کے ساتھ اقتصادی تعلقات قائم کرنے والے ممالک پر دباو ڈالنے کے لئے کوشش کرتا ہے لہذا ہمارا ملک اور یورپی یونین کے درمیان منصوبہ بندی شدہ پروگرام کی تفصیلات معلوم نہیں کی جائے گی.
ایرانی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ بے شک تیل کی بات کو کھانے یا جیسی بحثیں کی طرح نہیں اور ہم یورپی یونین، چین اور روس کے ساتھ ایک راستے پر چل رہے ہیں.
انہوں نے کہا کہ ہم نے گروپ 4+1 اور یورپی یونین کے ساتھ ایران کے مطالبات کی فراہمی پر اتفاق کئے ہیں اور ہمیں امید ہے باہمی مذاکرات کے تحت جوہری معاہدے کے مسلسل نفاذ جاری رہے.
قاسمی نے کہا کہ اگر یورپی یونین اور دوسرے فریقین ایران کے لئے مناسب اور ضروری ضمانت فراہم نہ کرسکیں تو اس موضوع اسلامی جمہوریہ ایران کے فیصلے پر موثر ہوگا اور ہم اپنے ملک کے مفادات کے راستے پر قدم اٹھائیں گے.
9393**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@