ایران کے جوہری توانائی ادارے کے سربراہ کی روسی ہم منصب سے ملاقات

لندن، 17 ستمبر، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران کے جوہری توانائی ادارے کے سربراہ ان کے روسی ہم منصب نے ویانا میں ایک ملاقات کے دوران پُرامن جوہری سرگرمیوں کے شعبے میں باہمی تعاون کو بڑھانے پر تبادلہ خیال کیا.

تفصیلات کے مطابق، یہ ملاقات ویانا میں بین الاقوامی جوہری توانائی ایجنسی کی سالانہ جنرل اسمبلی کے اجلاس کے موقع پر ہوئی.
'علی اکبر صالحی' اور ان کے روسی ہم منصب 'الیکسی لخاچوف' نے اس موقع پر باہمی تعلقات کے فروغ بالخصوص پُرامن جوہری سرگرمیوں کے حوالے سے مشترکہ تعاون کو بڑھانے پر زور دیا.
ایران کے جوہری ادارے کے سربراہ نے پُرامن جوہری شعبے میں مشترکہ سرگرمیوں کے فروغ پر روسی کوششوں کو سراہا.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران، روس کے ساتھ سائنسی، ریسرچ اور مختلف شعبوں میں پُرامن جوہری ٹیکنالوجی کے استعمال کے لئے تعاون کو وسعت دینے کا خواہاں ہے.
دونوں سربراہوں نے اس موقع پر ایران میں زیر تعمیر نئے جوہری پلانٹس سے متعلق ہونے والی پیشرفت کا جائزہ لیا.
روس کے جوہری توانائی ادارے کے سربراہ نے اس ملاقات میں ایران جوہری معاہدے کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ روسی صدر کے حالیہ دورہ ایران کے موقع پر دونوں ممالک کے درمیان جوہری صنعت میں تعاون کے فروغ کا خیرمقدم کیا گیا.
انہوں نے مزید کہا کہ روس ایٹم کمپنی ایران کے جوہری توانائی ادارے کے ساتھ درمیانے ری ایکٹرز کے لئے تیار ہے جس کا مقصد بجلی کی پیداوار اور صاف پانی کی فراہمی ہے. 274**
ہميں اس ٹوئٹر لينک پر فالو کيجئے. IrnaUrdu@