اوآنا اقوام اور حکومتوں کو قریب لانے میں کردار ادا کرسکتی ہے: ایرانی وزیر ثقافت

تہران، 3 ستمبر، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر ثقافت اور اسلامی گائیڈنس نے کہا ہے کہ ایشیا پیسفک نیوز ایجنسیوں کی تنظیم (OANA) دنیا کی اقوام اور حکومتوں کو قریب لانے اور ان کے درمیان یکجہتی کے فروغ کا ذریعہ بن سکتی ہے.

یہ بات 'سید عباس صالحی' نے پیر کے روز تہران میں ایشیا پیسفک نیوز ایجنسیوں کی تنظیم (OANA) کے 43ویں ایگزیکٹو بورڈ کے اجلاس کی افتتاحی نشست سے خطاب کرتے ہوئے کہی.
یہ اجلاس ارنا نیوز ایجنسی کی میزبانی میں ہورہا ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ اوآنا تنظیم نہ صرف علاقائی تعاون اور بین الاقوامی ہم آہنگی کو فروغ دے سکتی ہے بلکہ اس کے ذریعے میڈیا کی دنیا میں یکطرفہ رویے کا مقابلہ بالخصوص اس کے منفی اثرات کو کم کرسکتی ہے.
عباس صالحی نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران اوآنا تنظیم کے اجلاس کے میزبان ملک کی حیثیت سے اس عزم کا اعادہ کرتا ہے کہ تنظیم کے رکن ممالک اور میڈیا اداروں کے تجربات کا استفادہ کیا جائے جس کا مقصد خبر کی دنیا اور معلومات کی درست فراہمی سے دنیا میں یکطرفہ رویے رکھنے والے نام نہاد میڈیا اور ان کے منفی عزائم کا مقابلہ کرنا ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ یقینا ثقافت ایک موثر سفارتکاری ہے جس کے ذریعے سیاسی اور سماجی شعبوں پر اس کے اچھے ثمرات ہوں گے. حقیقتا ممالک کی صلاحیتیں سیاسی اور بین الاقوامی سطح پر سنہری موقع ہے جس کے ذریعے ہم میڈیا ڈیپلومیسی کی سرگرمیوں کو مزید فروغ دے سکتے ہیں.
ایرانی وزیر ثقافت نے اس بات پر زور دیا کہ اوآنا تنظیم کے اس اجلاس میں تنظیم کے منشور پر نظرثانی اور موثر حکمت عملی بنانے کی ضرورت ہے تا کہ ہم نئے انداز میں ذرائع ابلاغ سے منسلک سرگرمیوں میں اضافہ کرسکیں.
انہوں نے مزید کہا کہ اوآنا ایک موثر اور مستقل ادارہ ہے اور ایک مضبوط اتحاد کی حیثیت رکھتی ہے لہذا ہمیں چاہئے کہ تبدیلی اور نئے اقدامات کے ذریعے اسے معلومات اور ذرائع ابلاغ کی دنیا میں اجاگر کریں.
سید عباس صالحی نے کہا کہ میڈیا اور ثقافتی ڈیپلومیسی کو آج دنیا میں اہم پوزیشن حاصل ہے لہذا ہمیں چاہئے کہ میڈیا اور ثقافتی سفارتکاری کے ذریعے اقوام کی تہذیب اور ثقافت کو فروغ دیں.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@