ارنا، ویتنام کی آواز کو مغربی ایشیا تک پہنچانے کیلئے اہم ذریعہ

تہران، 3 ستمبر، ارنا - ایران کی قومی نیوز ایجنسی (IRNA) کے سربراہ نے کہا ہے کہ ایران اور ویت نام کے درمیان مشترکات کو دیکھتے ہوئے ویتنامی نیوز ایجنسی مغربی ایشیائی خطے تک ارنا کے ذریعے اپنی ترجمانی کرسکتی ہے.

یہ بات ''سید ضیاء ہاشمی'' نے ویت نام کے خبررساں ادارے (VNA) کے مینجنگ ڈائریکٹر 'نگوئن ڈک لوئی'' NGUYEN DUC LOI’S کے ساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کہی.
نگوئن ڈک لوئی اوآنا تنظیم کے 43ویں اجلاس میں شرکت کے لئے تہران کے دورے پر ہیں.
اس موقع پر ارنا چیف نے کہا کہ ایرانی عوام ویتنام کی عظیم قوم کا بڑا احترام اور اسے ثابت قدم اور مشکلات کے سامنے مزاحمت کرنے والی سمجھتے ہیں.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران اور ویت نام کے درمیان حالیہ برسوں میں سماجی اور معاشی شعبوں میں تعلقات کو قابل قدر فروغ ملا ہے جس سے ہم دونوں خبررساں اداروں کے درمیان بھی تعلقات کو بڑھانے کے لئے پرعزم ہوتے ہیں.
ہاشمی کا کہنا تھا کہ ہمارا تعلق اور پیشہ وارانہ تعاون کا مقصد قوموں کے حقوق کا دفاع کرنا ہے، یہ کوئی سیاسی نعرہ نہیں بلکہ پیشہ وارانہ رویہ ہے اور ہم سمجھتے ہیں کہ میڈیا کے ذریعے ہمیں اپنے معاشرے کے مثبت چہرے کو اجاگر کرنا ہوگا.
انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں امریکی معاشرے سے کوئی مسئلہ یا دشمنی نہیں ہمارا اصل مسئلہ ایرانی قوم کے خلاف امریکہ کی منفی پالیسی ہے جو سراسر ناانصافی پر مبنی ہے.
ارنا چیف نے کہا کہ اگر ویتنامی قوم نے سالوں سال امریکی فوج سے جنگ لڑی ہو تو اس کا مطلب یہ نہیں کہ ویتنام کے عوام جنگ کے خواہاں تھے بلکہ وہ امن چاہتے تھے اور ان لوگوں کا مقابلہ کررہے تھے جنہوں ان پر جنگ کو مسلط کردیا تھا.
انہوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ ارنا اور ویتانمی نیوز ایجنسیاں اوآنا کے پلیٹ فارم کے ذریعے اپنی آواز دنیا تک پہنچائیں گی.
اس ملاقات میں ویتنامی نیوز ایجنسی کے سربراہ نے کہا کہ ان کا ملک بالخصوص ان کا ادارہ اسلامی جمہوریہ ایران کے ساتھ تمام شعبوں میں بشمول ذرائع ابلاغ کے شعبے میں مشترکہ تعاون کو بڑھانے کا خواہاں ہے.
انہوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ تہران میں اوآنا تنظیم کے اجلاس سے دونوں نیوز ایجنسیوں کے درمیان تعاون کو مزید فروغ دینے میں مدد ملے گی.
ارنا نیوز ایجنسی کی میزبانی میں آج 3 ستمبر سے ایشیا پیسفک نیوز ایجنسیوں کی تنظیم کے ایگزیکٹو بورڈ کے اجلاس کا انعقاد کیا جائے گا.
35 ممالک کے 44 خبررساں ادارے اس وقت اوآنا تنظیم کے رکن ہیں. اس تنظیم کو اقوام متحدہ کے ادارہ یونیسکو کی حمایت کے ساتھ 1961 کو قائم کیا گیا تھا جس کا مقصد علاقائی ممالک کی نیوز ایجنسیوں کے درمیان تعاون اور ذرائع ابلاغ کی فراہمی کو آسان بنانا ہے.
ارنا نیوز ایجنسی 1997 سے 2000 تک اس تنظیم کی صدر رہی. اس کے بعد ارنا سال 2016 میں اوآنا کی نائب صدر بھی رہ چکی ہے.
ارنا نیوز ایجنسی اس وقتOANA کی ممبر بورد آف ایگزیکٹو اور تنظم کی بانیوں میں سے ہے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@