چابہار منصوبے کو متاثر کرنے سے افغانستان کی ترقی کو نقصان پہنچے گا: ایران

نیو یارک، 27 جون، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران نے انتباہ کیا ہے کہ جو عناصر ایرانی بندرگاہ چابہار کو فروغ دینے کے منصوبے کو متاثر کرنے کی کوششیں کررہے ہیں وہ در حقیقت افغانستان میں عوام کی ترقی اور خوشحالی کے حق میں نہیں.

یہ بات اقوام متحدہ میں تعینات ایران کے مستقل مندوب ''غلام علی خوشرو'' نے افغانستان سے متعلق سلامتی کونسل کے مباحثے سے خطاب کرتے ہوئے کہی.

انہوں نے مزید کہا کہ افغانستان میں سلامتی کا قیام وہاں کی سماجی اور معاشی ترقی کے لئے ناگزیر ہے تاہم بدقسمتی سے سیکورٹی اس وقت افغانستان کا اصل مسئلہ ہے.

ایرانی مندوب نے کہا کہ افغانستان میں طویل المدت سماجی اور معاشی خوشحالی کے لئے سلامتی کی صورتحال کو مضبوط بنانا ہوگا.

انہوں نے مزید کہا کہ افغانستان میں قومی اتحاد حکومت کی حمایت ناگزیر ہے. اسلامی جمہوریہ ایران بحیثیت پڑوسی ملک افغانستان کی حمایت کا سلسلہ جاری رکھے گا کیونکہ ہم اپنے ہمسایہ ملک میں قیام امن و سلامتی اور مضبوط استحکام کے خواہاں ہیں.

غلام علی خوشرو نے کہا کہ ایران، افغانستان میں طالبان اور حکومت کے درمیان عارضی فائربندی کا خیرمقدم کرتا ہے اور اس کے علاوہ پاکستان اور افغانستان کے تعلقات میں حالیہ پیشرفت کو بھی خوش آئند قرار دیتے ہیں.

انہوں نے مزید کہا کہ ایرانی عوام اور حکومت افغان بھائیوں کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں اور ہم اس بات کی یقنی دہانی کراتے ہیں کہ ایران، افغانستان کی ترقی اور خوشحالی میں اپنا کردار ادا کرتا رہے گا.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@