فٹ بال ورلڈکپ، ایرانی قوم بالخصوص خواتین کی خوشی دوبالا

تہران، 26 جون، ارنا - روس میں منعقدہ 2018 فٹ بال ورلڈکپ نے ایران میں ایک بار پھر کھیلوں کی خوشی کا سماء باندھ دیا تاہم خصوصی بات یہ ہے کہ اس بار ایرانی خواتین نے آزادانہ طور پر میچ دیکھا اور اپنے اہل خانہ کے ساتھ اسٹیڈیم آکر قومی ٹیم کے میچ کا نظارہ بھی کیا.

ایران میں اسلامی نظام قائم ہے جہاں اسلامی قوانین اور ملکی آئین کے مطابق خواتین کو برابر کے حقوق حاصل ہیں اور آج اس کا نتیجہ ہم دیکھ سکتے ہیں کہ ایران کے مختلف شعبہ ہائے زندگی بشمول سیاسی، سماجی، معاشی بالخصوص قانون نافذ کرنے والے اداروں میں خواتین بڑی تعداد میں شریک ہیں.

اس کے علاوہ کھیلوں کے میدان میں بھی ایرانی خواتین کی کارکردگی اعلی ہے اور قومی، علاقائی اور بین الاقوامی مقابلوں میں وطن کی دختران نے ہمیشہ قومی پرچم اور ملک کے سر کو فخر سے بلند کیا ہے.

اسلامی جمہوریہ ایران کی قومی فٹ بال ٹیم جنہیں ہمیشہ سے عوام کی جانب سے بھرپور پذیرائی اور حمایت حاصل رہی ہے روس 2018 فٹ بال ورلڈکپ کے لئے کوالفیائی کرلیا تھا. ایرانی ٹیم گزشتہ دنوں روس پہنچی اور گروپ بی میں پرتگال، اسپین اور مراکش کے ساتھ میچ کھیلے.

ان تمام مقابلوں کو ملک میں دیکھنے کے لئے ایرانی عوام بالخصوص خواتین بے تاب تھے اور ہر میچ میں مردوں کے ساتھ ساتھ وطن کی دختران نے بھی قومی کھیلاڑیوں کی بھرپور حمایت اور ان کی کامیابی کے لئے دعائیں کیں.

اس کے علاوہ ایک خوش آئند بات یہ ہے کہ ایران کے ہسپانوی اور پرتگالی ٹیموں کے سنسنی خیز میچوں کو دیکھنے کے لئے تہران کے معروف فٹ بال اسٹیڈیم آزادی کو کھول دیا گیا جہاں ایرانی خاندان بالخصوص خواتین اور ان اہل خانہ نے وہاں آکر اس میچ کو براہ راست دیکھا.

اس موقع پر ایرانی خواتین کی بڑی تعداد اپنے پیاروں کے ساتھ اسٹیڈیم آئی اور آزادانہ طور پر قومی ٹیم کے میچ کا نظارہ کیا.

آزادی اسٹیڈیم اسٹیڈیم خواتین نے اپنے پیاروں کے ساتھ قومی ٹیم کو داد دی اور دنیا کو دیکھایا کہ وہ ہر لمحے میں قومی یکجہتی اور مشترکہ عزم کے ساتھ وطن کے لئے باہر یکدل ہیں.

یہ بات قابل ذکر ہے کہ ایران اور پرتگال کا میچ 1-1 سے برابر ہونے اور ایران کے ورلڈکپ سے باہر جانے کے باوجود رات گئے تک تہران سمیت ایران کے مختلف شہروں میں عوام نے جشن منایااور قومی کھیلاڑیوں کی کارکردگی پر جھوم اٹھے.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@