الجیریا کی ایرانی فٹ بال ٹیم کے پرتگالی ہیڈکوچ پر نظر

الجیریا، 25 جون، ارنا - الجیریائی فٹ بال فیڈریشن نے ایرانی قومی فٹ بال کے پرتگالی کوچ 'کارلوس قوریز' کی خدمات حاصل کرنے میں دلچسپی کا اظہار کیا ہے.

تفصیلات کے مطابق، الجیریا کے فٹ بال حکام نے قومی ٹیم کے ہیڈکوچ 'رابح ماجر' کو ٹیم کی ناکامی کی وجہ سے پر برخاست کردیا اور اب کچھ خبریں آرہی ہیں کہ الجیریا، ایرانی ٹیم کے پرتگالی کوچ کی خدمات حاصل کرنا چاہتا ہے.

59 سالہ رابح ماجر ایک دور میں الجیریا کے فٹ بال ہیرو تھے جنہوں نے گزشتہ 8 ماہ سے قومی فٹ بال ٹیم کے کھیلاڑیوں کی تربیت کی ذمے داری سنبھالی ہوئی تھی تاہم الجیریائی فٹ بال حکام نے انھیں فارغ کردیا.

الجیریائی فٹ بال فیڈریشن کے صدر 'خیر الدین زطشی' نے اس حوالے سے کہا کہ قومی فٹ بال کے ہیڈکوچ کے لئے تین آپشنز پر کام کررہے ہیں جس میں سر فہرست ایرانی ٹیم کے پرتگالی ہیڈکوچ شامل ہیں.

انہوں نے مزید کہا کہ کارلوس قوریز ایک معروف اور تجربہ کار کوچ ہیں اور ہمیں ایسے کوچ کی ضرورت ہے جس کی فرانسیسی زبان پر گرفت ہو تا کہ وہ ہمارے کھیلاڑیوں کو بہ آسانی تربیت دے سکے.

یاد رہے کہ روس کے 2018 فٹ بال ورلڈکپ سے پہلے ایران اور الجیریائی ٹیموں کے درمیان ایک دوستانہ میچ کا انعقاد کیا تھا جس میں ایران نے 2-1 سے الجیریائی ٹیم کو ہرادیا تھا.

یہ بات قابل ذکر ہے کہ کارلوس قوریز نے 2014 اور 2018 میں دو مرتبہ ایرانی ٹیم کو ورلڈکپ مقابلوں میں شرکت کے قابل بنایا تھا.

کارلوس قوریز 2010 میں اپنی قومی ٹیم پرتگال کے بھی ہیڈکوچ رہے اور انہوں نے پرتگال کو ورلڈکپ میں کوالفیائی کروایا تھا اور اس کے علاوہ وہ 2002 میں بھی جنوبی افریقہ کی قومی ٹیم کو ورلڈکپ میں لایا تھا.

اس سے پہلے ایران کے پرتگالی ہیڈکوچ نے اعلان کیا تھا کہ انہوں نے ایرانی فیڈریشن کے ساتھ اپنے معاہدے کو 2020 تک توثیق کے لئے اتفاق کیا ہے.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@