ایران کے پاس بیرونی جارحیت سے نمٹنے کیلئے آپریشنل منصوبہ موجود ہے: جنرل صفوی

شیراز، 25 جون، ارنا - ایرانی سپریم لیڈر کے معاون خصوصی اور مشیر نے کہا ہے کہ ایران کو ہمسایہ ممالک کی جانب سے کسی قسم کے عسکری خطرات لاحق نہیں بلکہ ہمیں خطے کے باہر سے خطرات کا سامنا ہے تاہم ان سے نمٹنے کے لئے ہمارے پاس ہمہ وقت قابل عمل حکمت عملی موجود ہے.

یہ بات میجر جنرل ''سید یحییٰ رحیم صفوی'' نے ایرانی شہر شیراز کی ایک مقامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی.

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ آٹھ سالہ مسلط کردہ جنگ سے 30 سال گزرنے کے بعد آج ریاست ایران، ملکی نظام اور ہماری قوم کو پڑوسیوں سے عسکری جارحیت کے خطرات نہیں.

انہوں نے مزید کہا کہ دشمنوں کے کسی بھی قسم کے منصوبے اور خطرات سے نمٹنے کے لئے ہماری آپریشنل تیاری مکمل ہے.

جنرل صفوی نے کہا کہ ہمیں امریکہ اور ناجائز صہیونی ریاست سے خطرات ہیں اور اس بات کا امکان ہے کہ ان کی جانب سے خطے میں نئی پراکسی وار کا آغاز بھی کیا جائے.

انہوں نے مزید کہا کہ پراکسی وار کے امکانات موجود ہیں تاہم اسلامی جمہوریہ ایران کسی بھی صورتحال سے نمٹنے کے لئے تیار ہے اور تمام خطرات کو ٹالنے کے لئے ہمارے پس آپریشنل منصوبہ موجود ہے.

قائد انقلاب کے مشیر نے مزید کہا کہ اندرونی اور بیرونی خطرات سے نمٹنے کے لئے ایران کی مسلح افواج سمیت تمام ملکی فورسز مکمل تیاری میں ہیں.

انہوں نے کہا کہ آج خطے میں جیوپولیٹیکل صورتحال کے لحاظ سے اسلامی جمہوریہ ایران کی پوزیشن مضبوط ہے لہذا دشمن چاہے مانے یا نہ مانے، ایران کو خطے ہمیں نظر انداز کیا جاسکتا ہے.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@