گندم درآمدات کی اب ضرورت نہیں: نائب ایرانی وزیر زراعت

مراغہ، 21 جون، ارنا - ایران کے نئاب وزیر جہاد زراعت نے کہا ہے کہ رواں سال ملک میں ایک کروڑ 2 لاکھ ٹن گندم کی پیداوار ہوئی ہے جس کے بعد ایران کو اب گندم کی درآمدات کی ضرورت نہیں ہوگی بلکہ ہم جلد گندم برآمد کرنے والا ملک بن جائیں گے.

یہ بات ''عباس کشاورز'' نے جمعرات کے روز ایران کے شمال مغربی علاقے ہشترود میں گندم کے کھیتوں کے دورے کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہی.

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ وطن عزیز ایران کی خوشحالی صرف اجتماعی تعاون سے ممکن ہے اور اس سال کاشت کاروں، ماہرین اور زرعی محقیقین کے ساتھ مل کر گندم میں خودکفیل ہونے کا جشن منائیں گے.

انہوں نے مزید کہا کہ گندم کے حوالے سے اب ہمیں درآمد کرنے کی ضرورت نہیں بلکہ خودانحصاری کی پوزیشن حاصل کرنے کے علاوہ ہم جلد گندم برآمد کرسکیں گے.

ایران میں 2014 کے سروے کے مطابق، کل زرعی زمینوں کا رقبہ 16477000 ایکٹر پر مشتمل ہے جس پر 3359 افراد زراعت کی سرگرمیوں میں مصروف ہیں.

اس رقبے میں سے 60 لاکھ ایکٹر زمین صرف گندم کی کاشت کے لئے مختص ہے. محکمہ جہاد زراعت کے مطابق ایران میں سالانہ 90 لاکھ گندم کا استعمال ہوتا ہے.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@