ایران جوہری معاہدے کو بچانے پر سنجیدہ ہیں: ناروے

تہران، 20 جون، ارنا - نارویجن وزیراعظم نے کہا ہے کہ ان کا ملک ایران جوہری معاہدے کے تحفظ کا خواہاں ہے اور مسئلے کا بڑی سنجیدگی سے تعاقب کررہا ہے.

ان خیالات کا اظہار ناروے کی خاتون وزیر اعظم 'عرنا سولبرگ' نے ملک کے دورے پر آئے ہوئے اسلامی جمہوریہ ایران کے جوہری ادارے کے سربراہ 'علی اکبر صالحی' کے ساتھ ایک ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا.

انہوں نے اقوام متحدہ کی گزشتہ جنرل اسمبلی کے موقع پر صدر حسن روحانی کے ساتھ اپنی ملاقات پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ایران جوہری معاہدہ دنیا کے لئے ایک کامیاب اور مثالی معاہدہ ہے.

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ ناروے، جوہری معاہدے کو تحفظ فراہم کرنے کا خواہاں اور اس مسئلے کو بڑی سنجیدگی سے دیکھ رہا ہے.

نارویجن وزیراعظم نے علاقائی مسائل پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ مشرق وسطی کی صورتحال انتہائی پیچیدہ ہے. خطی اختلافات کو خوش اسلوبی کے ساتھ حل کرنا ناروے کی پالیسی ہے.

اس ملاقات میں علی اکبر صالحی نے ایران اور ناروے کے درمیان اقتصادی، سرمایہ کاری اور تجارتی شعبوں میں مشترکہ تعاون کو مزید بڑھانے کا مطالبہ کیا.

انہوں نے ایران جوہری معاہدے کی حمایت کرنے پر ناروے کے مؤقف کو سراہتے ہوئے یورپ پر زور دیا کہ وہ اس حوالے سے مزید سنجیدہ اقدامات اٹھائے.

اس کے علاوہ ایران کے جوہری ادارے کے سربراہ نے سربراہ اقوام متحدہ 'آنتونیو گوترش' کے ساتھ بھی ملاقات کی.

آنتونیو گوترش نے ایران جوہری معاہدے کے مکمل حمایت کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ جوہری معاہدہ عالمی امن کو برقرار رکھنے کے لئے اہم ہے.

انہوں نے اس معاہدے کے دیگر فریقین سے مطالبہ کیا کہ اس کے مکمل نفاذ کے لئے اپنی ذمے داریاں ادا کریں.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@