اوپیک، امریکی تنظیم نہیں: ایرانی وزیر تیل

تہران، 20 جون، ارنا - ایران کے وزیر پیٹرولیم نے کہا ہے کہ تیل برآمد کرنے والے ممالک کی تنظیم (OPEC) نہ تو امریکی تنظیم ہے اور نہ ہی تیل کو دوسرے ممالک کے خلاف سیاسی آلہ کار کے طور پر استعمال کرنا چاہئے.

یہ بات 'بیژن نامدار زنگنہ' نے دورہ ویانا کے موقع پر صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.

امریکی نیوز ایجنسی بلومبرگ کے مطابق، ایرانی وزیر تیل اوپیک تنظیم کے 174ویں بین الاقوامی سمینار میں شرکت کے لئے ویانا میں موجود ہیں.

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ اوپیک تنظیم میں جو بھی فیصلہ کرنا ہو تو ضروری ہے کہ تمام اراکین کے درمیان اتفاق رائے سے ہو تاہم اس اجلاس میں کسی بھی فیصلے پر اتفاق رائے کا کوئی امکان نہیں ہے.

بیژن زنگنہ نے مزید کہا کہ اہم بات یہ ہے کہ اوپیک ایک آزاد اور مستقل تنظیم ہے اور یہ کوئی امریکی تنظیم اور اس کی وزارت توانائی نہیں.

انہوں نے کہا کہ اوپیک ایسا فورم نہیں جہاں ڈونلڈ ٹرمپ اپنے احکامات کو دوسروں پر مسلط کریں. ٹرمپ نے تنظیم کے دو اہم رکن پر یکطرفہ پابندیاں لگا کر عالمی تیل منڈی میں مشکلات پیدا کی ہیں.

ایران کے وزیر پیٹرولیم نے مزید کہا کہ لہذا اوپیک سیاسی تنظیم نہیں بلکہ اسے چاہئے کہ تیل کو سیاست سے دور رکھنے کے اقدامات کی حمایت کرے.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@