خلائی ٹیکنالوجی میں ایران دنیا کے 9 بڑے ممالک میں شامل ہوگیا ہے

تہران، 19 جون، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران خلائی ٹیکنالوجی کے میدان میں ان 10 ممالک کی فہرست میں شامل ہے جنہوں نے اس شعبے میں مکمل طور پر ترقی حاصل کی ہے.

یہ بات ایران کے قومی خلائی ادارے کے سربراہ 'مرتضی براری' نے منگل کے روز خلائی امور سے متعلق نجی شعبوں کے کردار کے عنوان سے منعقد ہونے والے سمینار میں خطاب کرتے ہوئے کہی.

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ آج خلائی ٹیکنالوجی کی صنعت کے نجی شعبوں سے گہرے تعلقات ہیں اور تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق اس شعبے سے حاصل ہونے والی 435 ارب ڈالر کی آمدنی میں سے 260 ارب ڈالر کا تعلق نجی شعبے سے ہیں.

انہوں نے کہا کہ خلائی ٹیکنالوجی میں مکمل ترقی سے مراد سیٹلائٹ کی پیداوار، گراؤنڈ اسٹیشن کے قیام، لانچر کی تعمیر اور سیٹلائٹ نیٹ ورک کا استعمال ہے.

ایرانی عہدیدار کا کہنا تھا کہ ہمیں خلائی شعبے میں مزید ترقی اور کامیابی حاصل کرنے کے لئے اپنی سرمایہ کاری کو بڑھانے کی ضرورت ہے.

یہ بات قابل ذکر ہے کہ 1999ء میں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کی قرارداد کے مطابق پہلی بار خلاء میں بھیجے جانے والے سیٹلائٹ کے بعد ہر سال 4 سے 10 اکتوبر تک عالمی ہفتہ خلاء بازی کے طور پر منایا جاتا ہے.

خلائی ٹیکنالوجی اور مواصلاتی ٹیکنالوجی کی رسائی کے استعمال اور موبائل فونز کی تخلیق انسانی زندگی میں اہم کردار ادا کر رہا ہے.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@