امریکی پابندیاں بے اثر، روس ایران کیساتھ تیل شعبے میں تعاون کو بڑھانے کیلئے پُرعزم

تہران، 19 جون، ارنا – ایران مخالف نئی امریکی پابندیاں غیرملکی کمپنیوں کی ایران کے ساتھ تیل کے شعبے میں تعاون کرنے کی راہ میں رکاوٹ نہ ڈال سکیں بلکہ روس نے ایران کی عراق کے ساتھ مشترکہ آئل فیلڈ کو فروغ دینے کے منصوبے میں حصہ لینے کا فیصلہ کیا ہے.

یہ بات ایران کی قومی تیل کمپنی کے ڈپٹی منیجنگ ڈائریکٹر 'غلامرضا منوچہری' نے آج بروز منگل تہران میں منعقدہ ایک پریس کانفرنس کے موقع پر ارنا کے نمائندے کے ساتھ گفتگوکرتے ہوئے کہی.

انہوں نے جوہری معاہدے سے امریکہ کی علیحدگی کے بعد ایران میں غیر ملکی کمپنیوں کی سرگرمیوں کے تسلسل کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ فی الحال بھارت، خلیج فارس میں واقع فرزاد بی گیس فیلڈ کے فروغ کے منصوبے پر سنجیدہ طور پر باہمی تعاون کر رہا ہے اور اب بھی ہم روسی 'گیسپوم تیل کمپنی' کے ساتھ ایران کے مغربی علاقے میں آذر اور چنگولہ نامی تیل فیلڈز کو فروغ دینے کے لیے مذاکرات کر رہے ہیں.

غلامرضا منوچہری نے کہا کہ ایرانی جنوبی پارس گیس فیلڈ کے 13، 14، 22، 23 اور 24 فیزوں کی ترقی دی جا رہی ہے اور اس کے فیز11 کا ٹینڈر بھی منعقد کیا گیا ہے.

9410*274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@