ایران کیساتھ یورپ کی چھوٹی اور درمیانی کمپنیوں کا تعاون ہماری ترجیح ہے: مغرینی

تہران، 13 جون، ارنا - یورپی یونین کی چیف خارجہ پالیسی نے کہا ہے کہ اس وقت ہم ایران کے ساتھ یورپ کی چھوٹی اور درمیانی کمپنیوں کے تعاون بڑھانے پر غور کررہے ہیں جن کے امریکہ کے ساتھ تعلقات کم ہیں.

یہ بات 'فیڈریکا مغرینی' نے یورپی پارلیمنٹ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی.

انہوں نے مزید کہا کہ ایران اور یورپ کی چھوٹی اور درمیانی کے مابین باہمی تعاون کو فروغ دینا ہماری پہلی ترجیح ہے.

انہوں نے کہا کہ یورپ، ایران جوہری معاہدے کے تحفظ کا خواہاں ہے اور اس مقصد کے لئے مختلف شعبوں بالخصوص بینکاری، مالیاتی، سرمایہ کاری، نقل و حمل اور تیل کے شعبوں میں اہم اقدامات اٹھائے جارہے ہیں.

خاتون یورپی رہنما نے مزید کہا کہ موجودہ صورتحال میں بینکاری اور مالیاتی شعبوں میں باہمی تعاون کی بحالی ہمارا سب سے بڑا مسئلہ ہے جبکہ اس حوالے سے سیاسی سطح پر بات چیت جاری ہے. تہران اور برسلز میں ماہرین اس مسئلے پر کام کررہے ہیں.

انہوں نے کہا کہ یورپی یونین کے نمائندوں پر مشتمل ایک نیٹ ورک کا قیام عمل میں لایا جارہا ہے جس کا مقصد عملی اقدامات کو آگے بڑھانا ہے.

فیڈریکا مغرینی نے ایران سے مطالبہ کیا وہ دہشتگردی کی مالی معاونت کی روک تھام، انسداد منی لانڈرنگ اور بینکاری نظام میں اصلاحات لانے کے لئے مزید اقدامات کرے.

انہوں نے ایران جوہری معاہدے سے امریکی علیحدگی پر تنقید کرتے ہوئے اس بات پر انتباہ کیا کہ جوہری معاہدے کی تبدیلی یا اس کا نعم البدل لانے کے سنگین نتائج ہوں ہوں گے.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@