بھارت، امریکی پابندیوں کی پرواہ کئے بغیر چابہار میں سرگرمیوں کے آغاز کیلئے پُرعزم

نئی دہلی، 9 جون، ارنا – بھارت نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ امریکہ کی ایران مخالف نئی پابندیوں کی پرواہ کئے بغیر ایرانی بندرگاہ چابہار میں ترقیاتی منصوبے کا آغاز کرے گا.

بھارتی اخبار ہندوستان ٹایمز نے وزارت جہازرانی کے حکام کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ بھارت، ایران جوہری معاہدے سے امریکی علیحدگی کے باوجود چابہار کو فروغ دینے کے منصوبے پر کام کا آغاز کرے گا.
حکام نے کہا ہے کہ اگلے ہفتے سے چابہار میں ترقیاتی منصوبے پر باضابطہ طور پر کام کا آغاز کیا جائے گا اس حوالے سے بھارتم ایران کی جہازرانی اور سمندری امور کی کمپنی کاوہ کے ساتھ رابطے میں ہے.
رپورٹس کے مطابق، بھارت نے چابہار بندرگاہ کو 18 ماہ کے لئے لیز پر لیا ہے اور وہ اس دوران چابہار کے انتظامات کو چلانے کی ذمے داری ایک بھارتی کمپنی کے حوالے کرنے کا خواہاں ہے.
بھارت کی پورٹس اتھارٹیکے ڈپٹی چیئرمین گوپال کرشنا نے کہا کہ چابہار کو عبوری طور پر آپریشنل کرنے کے لئے آمادہ ہیں اور اس عمل کا جلد آغاز کیا جائے گا.
یاد رہے کہ ایران نے چابہار بندرگاہ کے ایک حصے کا آپریشنل کنٹرول بھارت کے سپرد کردیا ہے. مذکورہ معاہدے پر ایرانی صدر ڈاکٹر حسن روحانی کے دورہ بھارت کے دوران دستخط کئے گئے تھے.
اس معاہدے کے تحت بھارت کو اٹھارہ مہینوں کے لیے بندرگاہ کے پہلے فیز کا آپریشنل کنٹرول حاصل ہو جائے گا.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@