شانگھائی سربراہی اجلاس، صدر روحانی کی چین روانگی

تہران، 8 جون، ارنا - صدر اسلامی جمہوریہ ایران ڈاکٹر 'حسن روحانی' اپنے چینی ہم منصب کی دعوت پر شنگھائی تعاون تنظیم (SCO) کے 18ویں سربراہی اجلاس میں شرکت کے لئے جمعہ کے روز تین روزہ دورے پر چین روانہ ہوگئے.

تفصیلات کے مطابق، مہرآباد بین الاقوامی ہوائے اڈے پر ایرانی سپریم لیڈر کے مشیر اعلی 'علی اکبر ولایتی' نے صدر مملکت کو رخصت کیا.

صدر روحانی شنگھائی سربراہی اجلاس کے موقع اپنے چینی ہم منصب 'شی چن پنگ' سمیت مختلف ممالک کے رہنما اور عالمی اداروں کے سربراہوں سے ملاقاتیں کریں گے.

اس دورے میں صدر مملکت ایک اعلی سطحی سیاسی اور اقتصادی وفد کی قیادت کررہے ہیں جس میں وزیر خارجہ محمد جواد ظریف، وزیر تیل بیژان نامدار زنگنہ، وزیر خزانہ مسعود کرباسیان اور صدارتی مشیر نہاوندیان شامل ہیں.

شنگھائی تنظیم کے سربراہی اجلاس 9 اور 10 جون کو چین کے ساحلی شہر چھینگ تاؤ میں منعقد ہوگا.

یہ بات قابل ذکر ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران 2005 سے شنگھائی تعاون تنظیم میں مبصر کی حیثیت سے فعال ادا کر رہا ہے. اس تنظیم کے رکن ممالک نے متفقہ طور پر کہا تھا کہ عالمی قوتوں کے ساتھ ایران کے حتمی جوہری معاہدے کے بعد تہران کو شنگھائی تعاون تنظیم میں دائمی رکنیت دی جائے گی.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@