یورینیم افزودگی کے لیول کو 190000 ایس ڈبلیو یو تک لانے پر تیار ہیں: ایران

تہران، 5 جون، ارنا - ایران کے جوہری توانائی ادارے کے سربراہ نے کہا ہے کہ قائد اسلامی انقلاب کے حکم کے مطابق نطنز کے جوہری پاور پلانٹ یورینیم افزودگی کے لیول کو 190000 ایس ڈبلیو یو تک لانے کی بھرپور صلاحیت رکھتا ہے.

'علی اکبر صالحی' نے منگل کے روز پریس کانفرنس کرتے ہوئے مزید کہا کہ ایران کے جوہری سائنسدانوں کی محنت سے جوہری پاور پلانٹ نطنز غیرمعمولی جوہری سرگرمیوں کے لئے تیار ہے.

انہوں نے کہا کہ نطنز کا جوہری مرکز طویل المدت منصوبوں بالخصوص یورینیم افزودگی کے لیول کو 190000 ایس ڈبلیو یو تک پہنچانے کے لئے مکمل آمادہ ہے.

صالحی نے مزید کہا کہ ایرانی سائنسدانوں نے خاموشی سے جوہری تنصیبات کے فروغ پر کام کیا ہے اور اس حوالے سے نطنز کے جوہری پاور پلانٹ کو بنیادی ڈھانچے کے لہذا سے مزید مضبوط بنایا گیا ہے.

انہوں نے کہا کہ ایران کے جوہری توانائی ادارہ بعض جوہری شعبوں میں اپنی سرگرمیوں کو مزید تیز کرنے کا فیصلہ کیا ہے تاہم ہمارا یہ فیصلہ جوہری معاہدے کے مطابق ہے.

علی اکبر صالحی نے مزید کہا کہ قائد اسلامی انقلاب کے احکامات کے مطابق، اسلامی جمہوریہ ایران اپنے عالمی وعدوں پر قائم رہے گا کیونکہ یہ ہمارا دینی اور سیاسی عقیدہ ہے کہ جب وعدہ کیا تو یقینا اس پر عمل کیا جائے گا.

انہوں نے کہا کہ ایران کی جوہری سرگرمیاں مکمل طور پر پُرامن ہیں اور اس حوالے سے ہم عالمی جوہری توانائی ادارے کے ساتھ تعاون کررہے ہیں اور کرتے رہیں گے.

اعلی ایرانی عہدیدار نے کہا کہ جیسا کہ سپریم لیڈر نے فرمایا جوہری معاہدہ اور پابندیاں ایک ساتھ نہیں چل سکتے اور نہ ہی ہم جوہری معاہدے پر عمل کرنے کے ساتھ ساتھ پابندیوں کو تسلیم کرسکتے ہیں.

یاد رہے کہ ایرانی سپریم لیڈر حضرت آیت اللہ سید علی خامنہ ای نے گزشتہ روز ملک کی اٹامک انرجی آرگنائزیشن کو یورینیم افزودگی کا حکم دے دیا ہے.

انہوں نے فرمایا تھا کہ اس کا لیول 190000 ایس ڈبلیو یو تک ہوگا اور اس عمل میں تاخیر نہیں ہونی چاہئے.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@