ایران کے عالمی سائنسی تعاون کو پابندیوں سے کوئی خطرہ نہیں

تہران، 1 جون، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران اور دنیا کے مختلف ممالک کے درمیان سائنسی شعبے میں تعاون ہرگز پابندیوں سے متاثر نہیں ہوگا.

یہ بات ایرانی محکمہ صحت کے ڈائریکٹر جنرل برائے ٹیکنالوجی اور ریسرچ ڈاکٹر 'حسین وطن پور' نے ارنا نیوز ایجنسی کے نمائندے سے گفتگو کرتے یوئے کہی.

انہوں نے ایران اور مختلف ممالک کے درمیان موجودہ سائنسی تعاون کا ذکر کرتے ہوئے مزید کہا کہ ان تعاون کے فروغ کو پابندیوں سے ہرگز خطرہ نہیں اور نہ یہ سلسلہ رکنے گا.

ایران کی بڑھتی ہوئی سائنسی سفارتکار کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس وقت ہم مختلف ممالک کے ساتھ سائنسی تعاون کررہے ہیں اور پابندیوں سے سائنسی تجربات کی منتقلی اور سائنسی تبادلوں پر کوئی اثر نہیں پڑے گا.

یہ بات قابل ذکر کے کہ ایرانی محکمہ صحت کے ڈائریکٹر جنرل کی پابندیوں سے مراد جوہری معاہدے سے امریکی علیحدگی کے بعد ایران کے خلاف ممکنہ امریکی پابندیاں ہے.

حسین وطن پور نے مزید کہا کہ پابندیوں سے ہمیں یہ حوصلہ ملتا ہے کہ ہم اندرونی پیداوار اور وسائل پر انحصار کریں اور خودکفیل ہونے کے لئے سازگار ماحول پیدا کریں.

انہوں نے کہا کہ عالمی سطح پر سائنسی اور تحقیقاتی تعاون پر سفارتی اور جارحانہ اقدامات متاثر نہیں ہوسکتے اور نہ ہی ایران کے سائنسی مراکز پر پابندیاں لاگو ہوسکتی ہیں.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@