ایران جوہری معاہدے کا تحفظ ناگزیر ہے: یوگنڈا

الجیریا، 1 جون، ارنا - مشرقی افریقی ملک یوگنڈا کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ جوہری معاہدے سے امریکی علیحدگی سے خطے میں مزید مسائل پیدا ہوں گے لہذا اس سمجھوتے کا تحفظ ضروری ہے.

یہ بات 'سام کوتیسا' نے یوگنڈا کے دارالحکومت 'کامپلا' میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر 'سید مرتضی مرتضوی' کے ساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کہی.

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ امریکہ کی ایران جوہری معاہدے علیحدگی کے بعد خطے میں نئے بحران پیدا ہوں گے.

انہوں نے جوہری معاہدے کے دیگر فریقین سے مطالبہ کیا ہے کہ اس معاہدے کو بچانے کے لئے اپنی ذمے داری ادا کریں.

یوگنڈا کے وزیر خارجہ نے جوہری معاہدے سے امریکی علیحدگی پر افسوس اور تشویش کا اظہار کرتے ہوئے مزید کہا کہ اس اقدام سے سنگین نتائج برآمد ہوں گے.

انہوں نے ایران اور یوگنڈا کے درمیان باہمی تعلقات بالخصوص اقتصادی تعاون کی توسیع پر زور دیتے ہوئے اس امید کا اظہار کیا کہ وہ جلد اسلامی جمہوریہ ایران کا دورہ کریں گے.

اس ملاقات میں ایرانی سفیر نے جوہری معاہدے سے متعلق اور امریکی علیحدگی کے بعد کی تازہ ترین صورتحال کے حوالے سے ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف کے خصوصی مراسلے کو یوگنڈا کے وزیر خارجہ کے حوالے کردیا.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@