یورپی وزرائے خارجہ ایرانی سرمایہ کاری کے تحفظ پر بات کریں گے: مغرینی ‎

تہران،28 مئی، ارنا - یورپی یونین کی چیف خارجہ پالیسی نے کہا ہے کہ بروسلز میں ہونے والے یورپی وزرائے خارجہ کے اجلاس کا مقصد جوہری معاہدے اور ایران میں سرمایہ کاری کو تحفظ فراہم کرنا ہے.

یہ بات فیڈریکا مغرینی نے یورپی وزرائے خارجہ کے اجلاس میں شرکت کے لئے بروسلز پہنچنے پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہی.

انہوں نے مزید کہا کہ وزرائے خارجہ کے اجلاس کی اہم ترجیج جوہری معاہدے اور ایران میں سرمایہ کاری کو تحفظ فراہم کرنا ہے.

مغرینی نے بتایا کہ اس اجلاس میں یورپی یونین کے رکن ممالک ایران جوہری معاہدے کے تحفظ کے طریقوں پر تبادلہ خیال کریں گے.

یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کی سربراہ نے مزید کہا کہ اس نشست میں گزشتہ دنوں میں جوہری معاہدے کے حوالے سے مشترکہ کمیشن کی کامیاب نشست کے بارے میں ایک رپورٹ پیش کی جائے گی.

فیڈریکا مغرینی نے بتایا کہ یورپی ممالک کو چاہیے ایرانی حکام کی جانب سے مقرر شدہ دن( مئی کے اواخر) تک ایران جوہری معاہدے کو بچانے کے طریقہ کار کی وضاحت کریں.

یاد رہے کہ 8 مئی کو امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایران اور جوہری معاہدے کے خلاف پرانے الزامات کو دہرا کر اس معاہدے سے امریکہ کی علیحدگی کا اعلان کردیا تھا.

امریکہ کے اس فیصلے کے بعد یورپی یونین کی چیف خارجہ پالیسی 'فیڈریکا مغرینی' نے اعلان کر دیا کہ یورپ، ایران جوہری معاہدے کو بچانے کے لئے کسی بھی کوشش سے دریغ نہیں کرے گا.

ٹرمپ کی علیحدگی کے ردعمل میں یورپی ممالک(برطانیہ، جرمن اور فرانس) نے کہا کہ وہ ایران جوہری معاہدے پر قائم رہیں گے.

صدر اسلامی جمہوریہ ایران ڈاکٹر حسن روحانی نے بھی ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے جوہری معاہدے سے علیحدگی کے اعلان کے ردعمل میں کہا کہ آج سے یہ معاہدہ ایران اور اس پر دستخط کرنے والے 5 فریقین کے درمیان رہے گا.

9410*274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@