امریکی حکام ماضی سے سبق سیکھائیں: ایرانی وزیر دفاع

تہران، 27 مئی، ارنا – ایرانی وزیر دفاع اور لاجسٹک نے کہا ہے کہ امریکی حکام سامراجی طاقتوں کے ماضی سے سبق سیکھائیں.

یہ بات بریگیڈیئر جنرل 'امیر حاتمی' نے گزشتہ روز تہران میں ایک مقامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی.

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ آٹھ سالہ تحمیلی جنگ کے دوران امریکہ نے عراق کی شکست کی روک تھام کے لئے بہت سی کوششیں کی مگر وہ کامیاب نہ ہوچکا.

جنرل حاتمی نے کہا کہ آج ایران کے دشمنوں بالخصوص امریکہ ہماری دفاعی طاقت کی کمزوری کے لئے کسی بھی کوششوں سے دریغ نہیں کر رہے ہیں اور نئی پابندیاں عائد کرنے سے ان کا مقصد ہمارا دفاعی ڈیٹرنس کی شکست ہے.

انہوں نے عالمی جوہری معاہدے کے خلاف امریکہ کی حالیہ خلاف ورزی کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ امریکیوں سمجھتے ہیں کہ ہم اپنی دفاعی طاقت پر انحصار کرکے خلیج فارس کے پانیوں کے اوپر ان کے میزائیلوں کو تباہ کردیں گے.

انہوں نے کہا کہ آج کسی بھی ملک اسلامی جمہوریہ ایران کے خلاف کاروائی کرنے کی جرات نہیں رکھتا ہے اور ہم اپنے قومی سائنس پر انحصار کے ساتھ ہمارے ملک کی طاقت کو بڑھائیں گے.

ایرانی وزیر دفاع نے خطے میں ایران کے طاقتور کردار پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ اور ناجائز صہیونی ریاست ہم اور علاقائی ممالک کے دشمن ہیں لہذا ہم اپنی موجودگی کے ساتھ خطے کی پائیدار سلامتی کی مدد کر رہے ہیں.

9393**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@