دنیا میں امریکہ تنہا رہ گیا ہے: پاکستانی سابق سفیر

تہران ،27 مئی، ارنا - ایران میں تعینات پاکستان کے سابق سفیر نے کہا ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ کے ایران مخالف اقدامات کی وجہ سے اب امریکہ دنیا میں تنہائی کا شکار ہے.

یہ بات جاوید حسین نے ارنا کے نمائندے کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے کہی.

انہوں نے کہا کہ جامع جوہری معاہدے ایران سمیت یورپی یونین امریکہ چین اور روس کے درمیان میں نافذ ہوئے ہیں لہذا امریکہ یکطرفہ طور پر اپنے آپکو اس بین الاقوامی معاہدے سے علیحدہ نہیں کرسکتے تھے.

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ ایران کے جوہری معاہدے دنیا کے امن او امان کے لئے نہایت اہم ہے.

ایرانی جوہری معاہدے کو توڑنے سے دنیا میں امریکہ کی گرتی ہوئی ایمیج کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اب دنیا کے کوئی بھی ملک امریکہ کے ساتھ معاہدے کرنے سے پہلے اس بات پر سوچنے پر مجبور ہوجائے گا کہ کیا آمریکہ اس معاہدے پر عمل درآمد کرے گا یہ نہیں.

جاوید حسین نے مزید کہا کہ جوہری معاملے کے حوالے سے امریکی حکومت کی بد عہدی کے بعد اب اسلامی جمہوریہ ایران کو جوہری معاہدے سے ان کو ملنے والے فوائد کا جایزہ لینے کا حق حاصل ہے.

ماہر بین الاقوامی امور نے جوہری معاہدے کو جاری رکھنے پر یورپی ممالک کے عزم کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ اب دیکھنا یہ ہوگا کہ جرمن فرانس اور برطانیہ جوہری معاہدے کو جاری رکھنے کے لئے کتنے پرعزم ہے اور کس طرح ایران کا ساتھ دے سکتے ہیں.

امریکہ کے ایرانو فوبیا پالیسی پر تنقید کرتے ہوئے انکا کہناتھا کہ بین الاقوامی برادری کو اب ڈونلڈ ٹرمپ کی خارجہ پالیسی کا پتہ چل گيا ہے جس کی وجہ سے امریکہ کی ایران کے اقدامات کا کوئی فائدہ حاصل نہیں ہوگا.

1*271**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@