امریکہ کے بغیر جوہری معاہدے کے مشترکہ کمیشن کی نشست کا انعقاد

ویانا، 25 مئی، ارنا - ایران اور جوہری معاہدے میں شامل 5 مغربی طاقتیں امریکہ کے بغیر مشترکہ کمیشن کی نشست میں شرکت کے لئے ویانا پہنچ گئے ہیں اور اس حوالے سے نئے دور کے اجلاس کا انعقاد کیا جارہا ہے.

تفصیلات کے مطابق، ایرانی وفد کی قیادت سنیئر جوہری مذاکرات کار 'سید عباس عراقچی' کررہے ہیں.

اس نشست میں بین الاقوامی جوہری توانائی ادارے کے ڈائریکٹر جنرل یوکیا آمانو بھی شریک ہیں.

ایران جوہری معاہدے سے امریکہ علیحدگی کے بعد مشترکہ کمیشن کا یہ پہلا اجلاس ہے جس کا مقصد امریکی علیحدگی کے بعد صورتحال کا جائزہ لینا ہے.

سید عباس عراقچی اور یورپی یونین پالیسی چیف کی معاون ہلگا اشمیت اس اجلاس کی مشترکہ صدارت کررہے ہیں.

عراقچی نے گزشتہ روز ویانا پہنچنے پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آج کا اجلاس کی نوعیت غیرمعمولی ہے کیونکہ امریکہ کے الگ ہونے کے بعد دیگر فریقین کو جوہری معاہدے کے تحفظ سے متعلق ضرورت اقدامات اٹھانے ہوں گے.

توقع کی جارہی ہے کہ ایرانی وفد اس نشست میں جوہری معاہدے کے تحفظ اور یورپی ممالک کی ذمے داری سے متعلق قائد اسلامی انقلاب حضرت آیت اللہ خامنہ ای کی حالیہ ہدایات اور ان کی جانب سے پیش کی جانے والی شرائط کو یورپ کے سامنے رکھے گا.

یہ بات قابل ذکر ہے کہ ایرانی سپریم لیڈر حضرت آیت اللہ خامنہ ای نے گزشتہ دنوں اعلی ملکی حکام کے ساتھ ایک ملاقات میں خطاب کرتے ہوئے یورپی ممالک کی ماضی میں وعدہ خلافیوں کا ذکر کیا اور فرمایا کہ یورپ کو ثابت کرنا ہوگا کہ وہ اس مرتبہ اپنی ماضی کی غلطی کو نہیں دہرائے گا.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@