مشہور روسی کمپنی کا ایران کیساتھ جوہری تعاون جاری رکھنے کا اعلان

ماسکو، 25 مئی، ارنا - روس کی مشہور سرکاری کمپنی روساٹم (ROSATOM) نے اعلان کیا ہے کہ جوہری معاہدے سے امریکی علیحدگی کے باوجود ایران اور روساٹم کمپنی کے درمیان مشترکہ منصوبوں پر تعاون جاری رہے گا.

یہ بات روساٹم کمپنی کے ڈائریکٹر جنرل 'الیکسی لخاچوف' نے روسی چینل رشیا ٹوڈے کو انٹریو دیتے ہوئے کہی.

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ جوہری معاہدے کی حالیہ صورتحال سے ایران میں جاری روسی کمپنی کے منصوبوں کو کسی بھی قسم کا خطرہ سامنے نہیں.

انہوں نے مزید کہا کہ ایران میں لگائے جانے والے روسی منصوبے جوہری معاہدے سے پہلے کے ہیں اور اگر عالمی قوانین اور سلامتی کونسل کی قراردادوں کو دیکھا جائے تو ہمارا تعاون کسی قانون کی خلاف ورزی نہیں ہے.

یہ بات قابل ذکر ہے کہ روس کی سرکاری کمپنی اس وقت ایران کے بوشہر جوہری مرکز میں تعاون کررہی ہے.

بوشہر پاور پلانٹ ایک ہزار میگاواٹ ایٹمی ری ایکٹر ہے جس میں گزشتہ سال بجلی پیدا کرنا شروع کردیا.

ایران کے جوہری توانائی ادارے اور روسی کمپنی روساٹم نے 2014 میں بوشہر پاور پلانٹ کے دوسرے اور تیسرے یونٹس کی تعمیر کے لئے ایک معاہدے پر دستخط کئے تھے.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@