مراکش دوسروں کی ایما پر الزامات عائد کررہا ہے: ایران

تہران، 24 مئی، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران نے کہا ہے کہ دوطرفہ تعلقات منقطع کرنے سے متعلق مراکشی حکام کے ایران مخالف الزامات کو دہرانے کا اصل مقصد بعض تیسرے فریق کو خوش کرنا ہے.

یہ بات ترجمان دفترخارجہ 'بہرام قاسمی' نے جمعرات کے روز اپنے ایک بیان میں کہی جس میں انہوں نے مراکشی وزیر خارجہ کی جانب سے امریکی چینل فاکس نیوز کو دئے گئے انٹریو کے دوران ایران پر لگائے جانے والے الزامات کی تردید کردی.

قاسمی نے مزید کہا کہ مراکشی وزیر خارجہ کو اس بات کا اچھی طرح علم ہے کہ ان کے الزامات من گھڑت، بے بنیاد اور خام خیالی پر مبنی ہیں.

انہوں نے کہا کہ بعض فریقین اپنے شیطانی مفادات سے دوسروں سے ایسے الزامات لگواتے ہیں اور یہ عناصر در حقیقت ان ممالک کے عوام کے مفادات کی پرواہ نہیں کرتے.

ترجمان دفترخارجہ نے مزید کہا کہ ایسے من گھڑت الزامات کو دہرائے جانے سے کچھ حاصل نہیں ہوگا بلکہ اس کا نقصان امت مسلمہ کو ہی ہوگا.

یاد رہے کہ مراکش نے ایران پر علیحدگی پسندوں کی حمایت اور مدد کرنے کے الزام کی بنا پر ملک کے ساتھ سفارتی تعلقات منقطع کردئے.

مراکشی وزیر خارجہ ناصر بوریطہ نے ایران اور لبنانی تنظیم حزب اللہ پر علیحدگی پسند گروپ پولیساریو فرنٹ کے جنگجوؤں کو تربیت اور اسلحہ فراہم کرنے کا الزام عائد کیا ہے.

پولیساریو فرنٹ مغربی صحرا میں آباد صحراوی قوم کی مراکش سے آزادی کی گوریلا جنگ لڑ رہا تھا.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@