امریکہ عالمی معاہدوں کی پاسداری کرے: سابق ملیشیائی وزیرخارجہ

کوالالمپور، 22 مئی، ارنا - ملائیشیا کے سابق وزیر خارجہ نے امریکہ سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ ایران جوہری معاہدہ سمیت عالمی معاہدوں کی پاسداری کرے.

یہ بات ڈاکٹر 'حامد البار' نے منگل کے روز ارنا نیوز ایجنسی کے ساتھ خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہی.

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ امریکہ کو چاہئے کہ وہ دنیا کی سوپر پاور کی حیثیت سے بین الاقوامی معاہدوں بشمول ایران کے ایٹمی سمجھوتے پر قائم رہے.

انہوں نے ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے ایران جوہری معاہدے سے الگ ہونے کے ردعمل میں کہا ہے کہ امریکہ کے اس اقدام سے عالمی امن و سلامتی خطرے میں پڑ گیا ہے.

حامد البار کا کہنا تھا کہ لگتا ہے کہ امریکہ عالمی امور کی قیادت کے بجائے اندرونی معاملات کو زیادہ دیکھ رہا ہے جس سے دنیا میں خلل پیدا ہوا ہے اور اس خلل کے خاتمے کے لئے یورپ کو چاہئے کہ اپنا کردار ادا کرے.

یہ بات قابل ذکر ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے 8 مئی کو ایک بار پھر ایران اور جوہری معاہدے کے خلاف پرانے الزامات کو دہرا کر اس معاہدے سے امریکہ کی علیحدگی کا اعلان کردیا تھا.

ٹرمپ نے ایران کے خلاف پرانی ہرزہ سرائیوں کو دہراتے ہوئے کہا کہ وہ ایران پر دوبارہ پابندیاں لگانے کے حکم نامے پر دستخط کریں گے.

ٹرمپ کی علیحدگی کے ردعمل میں یورپی ممالک نے کہا کہ وہ ایران جوہری معاہدے پر قائم رہیں گے.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@