جوہری معاہدے پر عملدرآمد جاری ہے : ایران جوہری توانائی ادارے کے ترجمان

تہران ،20 مئی، ارنا - ایرانی جوہری توانائی ادارے کے ترجمان 'بہروز کمالوندی' نے ایران اور یورپی یونین کے درمیان تعاون پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ کے جوہری معاہدے سے دستبرداری کے بعد جوہری معاہدے سے متعلق کوئی بھی عمل نہیں روکا ہے.

یورپی جوہری یونین کمیشن اور ایرانی جوہری ادارے کے وفود کے درمیان ملاقات کے موقع پر انہوں نے کہا کہ یورپی یونین کے ساتھ ہمارا تعاون جاری ہے جس میں امریکہ کی اقدامات کے مقابلے کے لئے اہم فیصلہ ہوں گے.

'بہروز کمالوندی' نے کہا ہم اس بات کا جایزہ لے رہے ہیں جس سے امریکہ کے بغیر جوہری معاہدے کو جاری رکھ سکیں.

ایران جوہری ادارے کے ترجمان نے مزید کہا کہ یورپی یونین نے گذشتہ سالوں میں بھی ایران کے پر امن جوہری اقدامات کی حمایت کی ہے جس کے نتیجے میں ایران اور یورپی ممالک کے درمیان اعتماد کے سطح میں اضافہ ہوا ہے.

انہوں نے ایران جوہری معاہدے سے امریکہ کی علیحدگی کے نتایج پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا ہے کہ امریکی صدر کے اس غلط فیصلے سے اس ملک کا چہرہ دنیا میں خراب ہوا ہے جس کا دور رس منفی نتایج ہوں گے.

ایران کے میزائلی نظام پربات چیت کا یورپی یونین کے اصرار کے رد عمل پر انہوں نے کہا کہ ایران جوہری معاہدے میں کوئی بھی تبدیلی نہیں آئے گی اور ہم اپنے دفاعی میزائلی سیسٹم پر بات چیت نہیں کریں گے.

'بہروز کمالوندی' نے مزید کہا کہ ایران اور یورپی ممالک بنکنگ سسٹم کی بحالی پر کام کررہے ہیں جس سے باہمی تجارتی اور اقتصادی روابط کو تقویت ملے گی.

1*271**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@