غزہ میں قتل عام کو روکوانے کیلئے عملی اقدامات کرنے ہوں گے: ملائیشائی اسکالر

کوالالمپور، 20 مئی، ارنا - ملائیشیائی اسلامی تنظیم کی مشاورتی کونسل کے صدر نے کہا ہے کہ فلسطین میں نہتے شہریوں پر صہیونی حکومت کی جانب سے ڈھائی جانے والے مظالم کو روکنا ہو گا.

یہ بات 'محمد اعظیمی عبدل حامد' نے ارنا کے نمائندے کے ساتھ خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہی.

انہوں نے کہا کہ ناجائز صہیونی ریاست کی جانب سے فلسطین میں غزہ کے سرحدی علاقے میں بے گناہ بچوں، عورتوں اور نہتے شہریوں پر مظالم کو روکنا ہو گا جس کے بارے میں پوری دنیا جانتی ہے.

اس موقع پر انہوں نے فلسطین میں ہونے والی جارحیت پر عالمی برادری کی خاموشی پر افسوس اور شدید تشویش کا اظہار کیا.

انہوں نے کہا کہ یقینی طور پر یہ بات افسوس ناک ہے کہ عالمی ایجنسیاں اور ادارے اس حوالے سے خاموش ہیں اور اب تک 100 سے زائد بے گناہ فلسطینی قیمتی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹے ہیں اور 10 ہزار سے زائد شہری شدید زخمی ہیں.

انہوں نے کہا کہ ناجائز صہیونی ریاست نے فلسطینوں پر ظلم کی انتہا کر دی ہے اور یہ اقوام متحدہ کی قراردادوں کی سرعام خلاف ورزی ہے.

ارنا کے نمائندے کے ساتھ گفتگو میں انہوں نے اقوام متحدہ سے مطالبہ کیا کہ وہ ناجائز صہیونی ریاست پر زور دیں کہ وہ فلسطین میں بربریت اور قتل عام کو روک دے.

271**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@