ایران جوہری معاہدے سے ٹرمپ کی علیحدگی عقلمندی نہیں تھی: برازیل

تہران، 18 مئی، ارنا - برازیلی سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے دفاع خارجہ امور کے چیئرمین نے کہا ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ نے ایران جوہری معاہدے سے نکل کر عقلمندی کا مظاہرہ نہیں کیا ہے.

یہ بات 'فرنانڈو کلور' جو برازیل کے مشہور سیاستدان اور سابق صدر بھی ہیں، نے براسیلیا میں اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر 'سید علی سقاییان' کے ساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کہی.

اس موقع پر سنیئر برازیلی رکن پارلیمنٹ نے کہا کہ ٹرمپ کا حالیہ اقدام غیرمنطقی تھا جس کی امریکی اتحادیوں نے بھی مخالفت کی ہے.

انہوں نے مزید کہا کہ ڈونلڈ ٹرمپ آج عالمی امن و سلامتی کی بالادستی کے لئے رکاوٹ بنے ہوئے ہیں. ٹرمپ امریکی صدر کے منصب کے لئے نامناسب شخص ہے.

فرنانڈو کلور نے کہا کہ ڈونلڈ ٹرمپ کی ایران جوہری معاہدے سے علیحدگی غیرمنطقی تھے جس کی برطانیہ اور فرانس نے بھی کھل کے مخالف کی ہے.

اس ملاقات میں ایرانی سفیر نے امریکی سفارتخانے کی بیت المقدس منتقلی کو غیرقانونی اور عالمی قوانین کی خلاف ورزی قرار دیتے ہوئے کہا کہ 60 سے زائد فلسطینیوں کو شہید کرکے ایسے سفارتخانوں کا افتتاح ہونا باعث شرم اور افسوس کی بات ہے.

سید علی سقاییان نے کہا کہ امریکہ نے جوہری معاہدے سے غیرقانونی طور پر نکل کر یہ بات ظاہر کردی ہے کہ وہ ہرگز عالمی معاہدوں کی پیروی نہیں کرتا جس کی وجہ سے امریکہ کو دنیا میں مزید تنہائی ملے گی.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@