جوہری معاہدے کی خلاف ورزی سے دنیا میں یکطرفہ اقدامات کو فروغ ملے گا: ایران

نیو یارک، 18 مئی، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران نے اس بات پر انتباہ کیا ہے کہ جوہری معاہدے کی خلاف ورزی اور بیت المقدس میں امریکی سفارتخانے کی منتقلی سے دنیا میں یکطرفہ اقدامات کے رجحان میں اضافہ ہوگا.

یہ بات اقوام متحدہ میں تعینات ایران کے مستقل مندوب 'غلام علی خوشرو' نے عالمی امن و سلامتی کی بالادستی کیلئے بین الاقوامی قوانین کی مضبوطی کے عنوان سے سلامتی کونسل کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی.

انہوں نے مزید کہا کہ دنیا میں یکطرفہ اقدامات کو فروغ دینا ایک مصیب اور ناکام تجربے کی عکاسی ہے اور آج ایران جوہری معاہدے کی خلاف ورزی کے ذریعے ایسے ناکام تجربے کے لئے ماحول بنایا جارہا ہے.

غلام علی خوشرو نے کہا کہ عالمی اداروں کی رپورٹس کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران جوہری معاہدے سے متعلق اپنے وعدوں پر عمل کرتا آرہا ہے مگر امریکہ عالمی قوانین بالخصوص اقوام متحدہ کے منشور کے برعکس اپنے تمام وعدوں کی خلاف ورزی کی ہے.

مقبوضہ فلسطین میں حالیہ صہیونی مظالم اور بربریت کی شدید مذمت کرتے ہوئے انہوں نے مزید کہا کہ بیت المقدس میں امریکی سفارتخانے کی افتتاحی تقریب کے موقع صہیونی فوج نہتے فلسطینیوں کے قتل عام میں مصروف تھی.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@