اقوام عالم پر امریکی دباؤ کا دور ختم ہوچکا ہے: چیف پاکستانی نیوز ایجنسی

اسلام آباد، 17 مئی، ارنا - پاکستان کی قومی نیوز ایجنسی (APP) کے سربراہ نے ایران جوہری معاہدے سے امریکہ کے الگ ہونے پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ دنیا میں پُرامن اور حریت پسند اقوام پر امریکی دباؤ کا دور ختم ہوچکا ہے.

ان خیالات کا اظہار ایسوسی ایٹڈ پریس آف پاکستان (اے پی پی) کے منیجنگ ڈائریکٹر 'مسعود ملک' نے ارنا نیوز ایجنسی کے نمائندے کو انٹریو دیتے ہوئے کیا.

انہوں نے کہا ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ جارحانہ پالیسی کے ذریعے اپنے اہداف حاصل کرنا چاہتے ہیں جس سے بین الاقوامی سیاسی صورتحال پر منفی اثرات مرتب ہوسکتے ہیں.

انہوں نے ایران جوہری معاہدے کی حمایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ معاہدہ ایران اور دنیا کی بڑی طاقتوں کے درمیان نافذ ہوا ہے لہذا صرف امریکہ یکطرفہ طور پر اس سے علیحدہ نہیں ہوسکتا.

مسعود ملک نے ایران جوہری معاہدے کے تمام فریقین پر اس کے مکمل عملدرآمد پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ عالم امن و امان اس معاہدے سے جڑا ہوا ہے لہذا عالمی برادری اس کی حفاظت کے لئے اپنی ذمے داری پوری کرے.

بین الاقوامی سطح پر جوہری معاہدے سے امریکہ کے دستبرداری کے بعد رونما ہونے والے حالات کا جایزہ لیتے ہوئے انہوں نے کہا ہے کہ یورپی ممالک اور دیگر بین الاقوامی برادری کا اس معاہدے سے اپنی حمایت کا اعلان قابل تعریف اور خوش آیند بات ہے.

پاکستان کے خبررساں ادارے (اے پی پی ) کے مینیجنگ ڈائریکٹر نے مزید کہا بین الاقوامی جوہری توانائی ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران اس معاہدے پر پابند رہا ہے.

انہوں نے کہا کہ امریکہ کے اس غیر زمہ دارانہ اقدام کی وجہ سے دنیا کے سبھی حکومتیں ایران کے جوہری معاہدے کی حمایت کررہے ہیں جس کے نتیجے میں امریکہ تنہائی کا شکار ہوا ہے.

مسعود ملک نے کہا ہم افغانستان اور انڈیا کے ساتھ کچھ اختلافات رکہتے ہیں جس کی وجہ سے ہماری حکومت خطے میں امن و استحکام چاہتی ہے.

انہوں نے کہا پاکستان دہشت گردی کے خاتمے کے لئے خطے اور ہمسایہ ممالک کے ساتھ تعاون کے لئے تیار ہے.

امریکہ کے خارجہ پالیسیوں پر نقطہ چینی کرتے ہوئے انکا کہنا تھا امریکی دانشوروں، میڈیا اور عوام اپنے حکمرانوں کی رویے بدلنے کے لئے ان پر مختلف طریقوں سے دباؤ بڑھانا چاہیئے.

انہوں نے مشرقی وسطی میں خون ریز جنگ کے نتیجے میں بے گھر ہونے والے لاکھوں افراد پر دنیا کی بے حسی پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس خانہ جنگوں میں لاکھوں افراد مارے گئے جس کے نتیجے میں امت اسلام مزید کمزور ہوئے ہیں.

انہوں نے ایران اور پاکستان کے درمیان بڑھتے ہوئے روابط پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ امید ہے کہ دونوں ممالک کے اقتصادی اور تجارتی روابط بھی اپنے اھداف تک پہنجنے میں کامیاب ہوں گے.

1*271**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@