یورپ کی علیحدگی، اپنی جوہری سرگرمیوں میں مزید تیزی لانے پر آمادہ ہے: ایران

تہران، 16 مئی، ارنا - ایران کے جوہری توانائی ادارے کے سربراہ نے کہا ہے کہ اگر یورپیوں جوہری معاہدے کے تحفظ کو یقینی نہ بنائیں تو ہم بھی جوہری معاہدے سے پہلی کی صورتحال میں داخل ہوں گے جس کے تحت ایران پھر سے یورنیم کی افزودگی کے عمل کا آغاز کرے گا.

یہ بات 'علی اکبر صالحی' نے گزشتہ روز تہران میں ایرانی جوہری توانا‏ئی ادارے اور ایران کی پارلیمنٹ کی خارجہ پالیسی اور قومی سلامتی کمیشن کے درمیان مشترکہ نشست سے خطاب کرتے ہوئے کہی.

انہوں نے کہا کہ یورپیوں کے ساتھ مذاکرات، بے اعتمادی کی بنیاد پر مبنی ہے.

انہوں نے کہا کہ ہم سپریم لیڈر کے احکامات کے مطابق یورپی فریقوں پر بھروسہ نہیں کر سکتے ہیں اور اگر جوہری معاہدے میں شامل دیگر پانچ فریقین ایرانی مفادات کے تحفظ سے متعلق فیصلہ کن ضمانت نہ دیں تو ایران بھی اس معاہدے میں شامل نہیں رہے گا لہذا جوہری معاہدے سے پہلی جیسی صورتحال واپس آنے کا امکان ہے.

انہوں نے اپنے بیان کے اختتام میں کہا کہ امید ہے کہ یورپی فریقین جوہری معاہدے کے تحت اپنے کئے گئے وعدوں کو پورا کریں گے.

9410*274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@