ایران جوہری معاہدے کے تحفظ کے لیے پرعزم ہیں: مغرینی

برسلز، 16 مئی، ارنا – یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کے سربراہ نے کہا ہےکہ ہم ایران جوہری معاہدے کے تحفظ کے لیے پرعزم ہیں.

یہ بات 'فیڈریکا مغرینی' نے گزشتہ روز برسلز میں جوہری معاہدے پر برطانیہ، جرمنی، فرانس اور ایران کے وزرائے خارجہ کے ساتھ مشترکہ نشست میں گفتگو کرتے ہوئے کہی.

انہوں نے اس نشست کے مثبت نتایج کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اس نشست میں برطانیہ، جرمنی، فرانس اور ایران کے وزرائے خارجہ نے الگ الگ جوہری معاہدے پر پابند رہنے کا اعلان کردیا.

انہوں نے کہا کہ اس نشست کے سب شرکا نے امریکہ کی علیحدگی پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے یہ تسلیم کیا کہ ایران کے ساتھ اقتصادی تعلقات کو معمول بنانا اور پابندیوں کو ختم کرنا جوہری معاہدے کے الگ نہ ہونے والا حصہ ہے.

یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کی سربراہ نے مزید کہا کہ اس نشست میں یورپی یونین، ایران اور تین یورپی ممالک نے جوہری معاہدے کے تناظر میں اپنے وعدوں پر قائم رہنے پر زوردیا.

انہوں نے کہا کہ اس نشست میں ایران کےساتھ اقتصادی تعاون بڑھانا، ایرانی تیل، گیس، پیٹروکیمکیل کی مصنوعات کی منتقلی اور فروخت کا تسلسل، ایران کے ساتھ موثر بینکنگ لین دین، ایران کے ساتھ بحری، زمینی، فضائی اور ریلوے کی حمل و نقل کا تسلسل، مالیاتی تعاون کو آسان بنانے کے لئے ایکسپورٹ کریڈٹ اور دیگر مالی اور انشورنس کی خدمات کو فراہم کرنا، ایرانی اور یورپی کمپینیوں کے درمیان باہمی تعاون کی توسیع کے لیے سنجیدہ اقدامات اٹھانا، ایران میں مزید سرمایہ کاری کرنا، ایران میں شفاف کاروباری اور تجارتی تعلقات کو مضبوط بنانے کے آٹھ موضوعات کا جائزہ لیا گیا.

انہوں نے کہا کہ ان ممالک کے نائب وزارئے خارجہ اگلے ہفتے ویانا میں ایک باہمی نشست میں شرکت کریں گے جس میں اس آٹھ موضوعات کے حل کے لیے بات چیت کریں گے.

9410*274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@