آسٹرین حکومت کی ایران جوہری معاہدے کی مکمل حمایت

ویانا، 15 مئی، ارنا - آسٹرین صدر 'الیگزینڈر فان ڈیئر بیلن' اور چانسلر 'سبسطین کرز' نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل سے ملاقات کے بعد ایران جوہری معاہدے کے عملدرآمد پر زور دیا ہے.

آسٹرین چانسلر نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کے ساتھ ملاقات کے بعد پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہمیں ایران جوہری معاہدے پر عمل کرتے ہوئے اس کی حفاظت کے لئے پوری کوشش کرنی چاہيئے.

انہوں نے کہا کہ اس معاہدے سے ہماری مفادات وابستہ ہے جس کی وجہ سے دنیا میں امن و امان کی صورت حال بہتر ہوگی.

آسٹرین چانسلر'سبسطین کرز' نے مزید کہا کہ ایران جوہری معاہدے سے ایران کے جوہری سرگرمیوں پر ہماری تشویش ختم ہوئی ہے جس کی وجہ سے ہم اس معاہدے کی مکمل حمایت کریں گے.

انہوں نے امریکی صدر کی ایران جوہری معاہدے سے دستبرداری پر اپنی مایوسی کا اظہار کیا.

یاد رہے کہ امریکہ کے صدر نے گذشتہ ہفتے میں 2015 میں ایران اور عالمی طاقتوں کے درمیان طے پانے والے بین الاقوامی جوہری معاہدے سے نکلنے کا اعلان کیا.

انہوں نے دعوی کیا کہ اس معاہدے سے مشرقی وسطی میں نہ صرف ایران کی پالیسی میں تبدیلی نہیں آئی بلکہ ایران اپنا میزائل سیسٹم کو مزید ترقی دے رہا ہے.

پاکستان سمیت عالمی برادری نے ڈونلڈ ٹرمپ کے اس اقدام کی شدید مزمت کی ہیں.

1*271**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@