اگر جوہری معاہدے میں شامل پانچ فریقین ضمانت دیں تو اس معاہدے کو بچایا جاسکتا ہے: صدر روحانی

تہران، 13 مئی، ارنا - صدر اسلامی جمہوریہ ایران نے کہا کہ اگر جوہری معاہدے میں شامل دیگر پانچ فریقین ایرانی مفادات کے تحفظ سے متعلق فیصلہ کن ضمانت دیں تو امریکہ اور صہیونیوں کی خواہش کے برعکس اس سمجھوتے کا تسلسل جاری رہے گا.

ان خیالات کا اظہار 'حسن روحانی' نے آج بروز اتوار ایران کے دورے پر آئے ہوئے اپنے سری لنکن ہم منصب 'میتھیری پالا سری سینا' کے ساتھ ایک مشترکہ پریس کانفرنس میں خطاب کرتے ہوئے کیا.

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ خارجہ پالیسی اخلاقیات، اعتماد اور عالمی قوانین کی مبنی پر مضبوط ہے لہذا بہت خوش ہیں کہ اسلامی جمہوریہ ایران اپنے تمام معاہدوں پر قائم ہے.

صدر روحانی نے امریکہ کی اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی جانب سے تصدیق ہونے والے ایران جوہری معاہدے کی خلاف ورزی اور اس سے علیحدگی پر اپنے افسوس کا اظہار کیا.

انہوں نے امریکہ کے ایسے اقدام کو عالمی قوانین کی پامالی اور اسٹریٹجک راستے کی خلاف ورزی قرار دیتے ہوئے کہا کہ اگر اپنے وعدوں پر قائم رہنے والے دوسرے پانچ ممالک جوہری معاہدے میں ایران کے مفادات کے تحفظ کو ضمانت دیں تو امریکہ اور ناجائز صہیونی ریاست کی خواہش کے برعکس اس معاہدہ قائم ہوجائے گا.

9393*274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@