یہودی خاخام کی صہیونی کے70 سالہ اقدامات کی مذمت

مشہد، 13 مئی، ارنا - اینٹی صیہونی یہودی یونین کے ترجمان نے صہیونی ریاست کو غیر قانونی قرار دے کر اسرائل کے 70 سالہ اقدامات کی مذمت کی.

یہ بات یہودی خاخام(رابی) یسرول ڈیوڈ ویس (Yisroel Dovid Weiss) نے ایرانی صوبے خراسان رضوی کے شہر مقدس مشہد میں منعقدہ فلسطین کانفرنس میں گفتگو کرتے ہوئے کہی.

انہوں نے بتایا کہ صہیونیزم نہ صرف یہودی تعلیمات کے مطابق نہیں ہے بلکہ اس تعالیم کے ساتھ متضاد ہے.

یہودی خاخام نے ہم صہیونی کی اپارتھائیڈ اور نسل پرست ریاست کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ہم اس بات پر یقین ہے کہ اسرائیل عالمی امن کو خطرے میں ڈالتا ہے.

ڈیوڈ ویس نے کہا کہ یہودی قوم ناجائز صہیونی ریاست کو ایک خودمختار ملک کی حیثیت سے تسلیم نہیں کرتی ہے اور اس کے بر سر اقتدار کے ساتھ مخالف ہے.

اس یہودی خاخام نے کہا کہ یہودی مذہب ہرگز قدس کو اسرائیل کا دار الحکومت تسلیم نہیں کرتا اور ہمیشہ صلح اور دوستی کی دعوت دیتا ہے۔

یہودی خاخام نے کہا کہ یہودی مذہب صہیونی ریاست کی طرف سے ملت فلسطین پر ہونے والے مظالم سے بیزار ہے اور ہرگز قدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم نہیں کرتا ہے.

9410٭274٭٭

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@