امریکہ نے جوہری معاہدے سے نکل کر اپنے مفادات کو صہیونیوں پر قربان کر دئے : شام

دمشق، 12 مئی، ارنا – شام کے نائب وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ امریکہ ایران جوہری معاہدے سے نکل کر اپنے مفادات کو صہیونیوں پر قربان کر دئے.

یہ بات 'فیصل المقداد' نے آج بروز ہفتہ کے روز ارنا کے نمائندے کے ساتھ خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے کہی.

انہوں نے کہا کہ ناجائز صہیونی ریاست اور عربستان سمیت خلیج فارس کے بعض عرب ممالک نے جوہری معاہدے سے امریکہ کی علیحدگی پر اپنی رضامندی کا اظہار کیا ہے.

شامی عھدیدار نے ایران ایٹمی معاہدے سے امریکہ کے نکلنے کو مقرر کردہ عالمی معیاروں کے خلاف قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس اقدام نے ثابت کر دیا کہ واشنگٹن ناقابل اعتماد ہے.

انہوں نے بتایا کہ جوہری معاہدے پر سمیت مغربی پالیسیاں امریکہ اور ان کے اتحادیوں کے ذریعے تل ابیب میں منصوبہ بندی کی گئی ہیں.

شامی نائب وزیر خارجہ نے کہا کہ جوہری معاہدے سے امریکہ کی علیحدگی نے مذاکرات کرنے والے ممالک کی 12 سالہ کوششوں کو بر باد کر دیا.

انہوں نے کہا کہ عالمی قوانین اور معاہدوں پر ایران کی دیانت داری کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ایران کے پاس کبھی بھی جوہری ہتھیار نہیں اور وہ ہرگز ایٹمی ہتھیاروں کے حصول کی تلاش میں نہیں ہے.

انہوں نے کہا کہ امریکہ اور اس کے اتحادی جو ایٹمی ہتھیاروں کے تباہ کن اثرات کا دعوی کر رہے ہیں سب سے پہلے صہیونی ایٹمی ہتھیاروں کو تباہ کریں.

انہوں نے بتایا کہ اسلامی جمہوریہ ایران غیر قانونی مقاصد کے لئے جوہری توانائی کا استعمال نہیں کر کے خطے اور دنیا میں قیام امن اور آرام کی تلاش کر رہا ہے.

شامی عھدیدار نے بتایا کہ ایران نے ہمیشہ تمام شعبوں سمیت جوہری معاہدے کے حوالے سے عقلانی طور پر عمل کیا ہے.

انہوں نے بتایا کہ ایران نے جوہری معاہدے کے تناظر میں کئے گئے وعدوں پر من و عن عمل درآمد کیا ہے اور عالمی جوہری توانائی ایجنسی نے بھی بارہا اس کی شفاف کارکردگی کی تصدیق کی ہے.

المقداد نے شام کی بدامنی میں مغربیوں کے منفی کردار کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ مغربی ممالک کا مقصد خطی بحران کی آگ کے شعلے کو مزید بھڑکانا ہے.

یاد رہے کہ ٹرمپ کی جانب سے جوہری معاہدے سے نکلنے کے فیصلے کے بعد ایرانی صدر نے جرمن چانسلر 'انجیلا مرکل' اور ترک صدر 'رجب طیب اردوان' کے ساتھ ٹیلی فونک رابطوں میں الگ الگ گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ یورپی ممالک کے پاس ایران جوہری معاہدے کے مکمل نفاذ اور اپنے وعدے نبھانے سے متعلق وقت بہت کم ہے.

ایرانی صدر نے اس بات پر زور دیا کہ جوہری معاہدے میں ایران کے مفادات کو واضح اور مکمل طور پر یقینی بنانا ہوگا اور ہمیں اس کی ضمانت دینی ہوگی.

9410٭274٭٭

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@