ایران اور پاکستان کا انسداد دہشتگردی کیلئے مشترکہ ورکنگ گروپ کے قیام پر اتفاق

تہران، 12 مئی، ارنا – اسلامی جمہوریہ ایران کے اٹارنی جنرل نے کہا ہے کہ ہمارے ملک اور پاکستان کے درمیان مشترکہ مسائل بالخصوص دہشتگردی اور منشیات کی اسمگلنگ سے مقابلے کرنے کے لئے مشترکہ ورکنگ گروپ تشکیل ہوجائے گا.

یہ بات علامہ 'محمد جعفر منتظری' نے ہفتہ کے روز ایران کے دورے پر آئے ہوئے اپنے پاکستانی ہم منصب 'اشتر اوصاف علی' کی ملاقات کے موقع پر صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک نے مشترکہ مسائل اور مشکلات کے حل پر تبادلہ خیال کرنے پر اتفاق کیا.

علامہ منتظری نے اسلامی جمہوریہ ایران اور پاکستان کے درمیان دیرینہ سیاسی، سیکورٹی، معلوماتی اور انصافی تعلقات کو سراہتے ہوئے کہا کہ ایسے دوطرفہ تعلقات دونوں ممالک کے مفاد میں ہوسکتے ہیں.

انہوں نے کہا کہ ہم نے اپنے پاکستانی ہم منصب کے ساتھ دہشتگردوں اور منشیات کی اسمگلنگ سے نمٹنے کے لئے مشترکہ ورکنگ گروپ کے انعقاد پر اتفاق کیا.

انہوں نے مزید کہا کہ آج اسلام کے دشمنوں سے مقابلہ کرنے کے لئے اسلامی ممالک بالخصوص ایران اور پاکستان کے درمیان باہمی تعاون اور یکجہتی ناگزیر ہے.

انہوں نے ایران اور پاکستان کی مشترکہ سرحدوں میں دہشتگردی گروہوں کی سازشوں کی کمی پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ کوئی شک نہیں ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان باہمی تعاون کے ذریعہ ایسے مسائل میں کمی آ رہی ہے.

تفصیلات کے مطابق، پاکستانی اٹارنی جنرل اشتر اوصاف علی آج بروز ہفتہ ایرانی وزیر انصاف 'علیرضا آوایی' کے ساتھ ملاقات کریں گے.

9393*274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@