یورپی یونین ایران جوہری معاہدے کے تحفظ کیلیے پرعزم ہے: مغرینی

ویانا، 12 مئی، ارنا – یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کی سربراہ نے دوسری بار اس بات پر زور دیا کہ یورپی یونین ایران جوہری معاہدے کے تحفظ کیلیے پرعزم ہے.

یہ بات 'فیڈریکا مغرینی' نے جمعہ کے روز اٹلی کے شہر فلورنس میں یورپی یونین کے اتحاد کی صورتحال سے متعلقہ ایک کانفرنس میں خطاب کرتے ہو‏ئے کہی.

انہوں نے امریکی پالیسی کو مضحکہ خیز قرار دیتے ہوئے کہا کہ موجودہ صورتحال میں مسائل کا حل شور و غل، تباہی اور حالات کو درہم برہم کرنے کے ذریعے ممکن نہیں ہے.

انہوں نے مزید بتایا کہ ہمیں باہمی مذاکرات اور عقلانیت کی ضرورت ہے اور دنیا میں کو‏ئی ملک اکیلے مسائل کا حل نہیں کر سکتا ہے.

یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کی سربراہ نے ایران جوہری معاہدے کی قابل قدر پیشرفتوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اگلے ہفتے ایرانی وزیر خارجہ کے ساتھ ساتھ فرانس، جرمن اور برطانیہ کے تین یورپی ممالک کے وزرا خارجہ کے ساتھ جوہری معاہدے پر تبادلہ خیال کریں گے.

موگرینی نے کہا کہ کوئی ملک یکطرفہ طور پر ایران جوہری معاہدے کو ختم نہیں کرسکتا ہے کیونکہ یہ ایک دوطرفہ معاہدہ نہیں بلکہ وہ عالمی ورثے میں سے ایک ہے.

یاد رہے کہ موگرینی نے جوہری معاہدے سے ٹرمپ کی علیحدگی کے بعد فورا اپنے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کہ یورپی ممالک اس معاہدے کا پابند رہیں گے.

تفصیلات کے مطابق، امریکی صدر نے حالیہ دنوں میں ایٹمی معاہدے سے یکطرفہ علیحدگی کے ساتھ عالمی مخالفتوں کے باوجود ایران پر پرانے الزامات کو دہرا کر جوہری معاہدے سے نکلنے کا اعلان کردیا.

9410٭274٭٭

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@