ایران جوہری معاہدے سے علیحدگی امریکہ کا بہانہ تھا: جنرل جعفری

تہران، 9 مئی، ارنا - ایرانی پاسداران انقلاب فورس (IRGC) کے کمانڈر نے کہا ہے کہ جوہری معاہدے سے امریکہ کا نکل جانا اس بات کا ثبوت ہے کہ امریکہ کا مسئلہ یورینیم کی افزودگی نہیں بلکہ ایران کی دفاعی اور میزائل طاقت کو نشانہ بنانا ہے.

یہ بات میجر جنرل 'محمد علی جعفری' نے بدھ کے روز عسکری ٹریننگ کانگریس سے خطاب کرتے ہوئے کہی.
اس موقع پر انہوں نے ایران، جوہری معاہدے سے امریکی علیحدگی پر خوش ہے. ایسے اقدامات سے پہلے بھی دنیا میں امریکہ کی کوئی حیثیت نہیں تھی.
جنرل جعفری نے ایک بار پھر امریکیوں کی جبر پر زور دیتے ہوئے کہا کہ امریکہ کوئی مذاکرات کے لئے قابل بھروسہ نہیں اور یہ مسئلہ کا ثبوت فیصلہ کن ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ جوہری معاہدے سے امریکہ کا نکل جانا اسلامی جمہوریہ ایران کے مستقبل کے لئے فیصلہ کن ہے لہذا ہمیں ملک کی اندرونی صلاحیتوں پر انحصار کے ساتھ ترقی کے راستے پر قدم اٹھانا چاہیئے.
انہوں نے کہا کہ یورپی ممالک امریکہ پر انحصار کرکے اس کے بغیر آزادانہ فیصلہ نہیں کرسکتے ہیں.
سربراہ پاسداران انقلاب نے کہا کہ آج اسلامی جمہوریہ ایران خطے میں دشمن اور دہشتگردوں کے خلاف جنگ میں تعمیری کردار ادا کرتے ہوئے فتوحات حاصل کر رہا ہے.
9393*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@