آج سے جوہری معاہدہ ایران اور 5 ممالک کے درمیان رہے گا: روحانی

تہران، 8 مئی، ارنا - ایرانی صدر نے ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے جوہری معاہدے سے امریکی علیحدگی کے اعلان کے ردعمل میں کہا ہے کہ آج سے یہ معاہدہ ایران اور اس پر دستخط کرنے والے 5 فریقین کے درمیان رہے گا.

ڈاکٹر 'حسن روحانی' نے منگل کی رات قوم سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ایران نے جوہری معاہدے پر من و عن عمل کیا ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ امریکہ نے بغیر ثوبت کے ہمیشہ ایران کی مخالفت کی ہے جبکہ امریکہ ہرگز جوہری معاہدے پر مخلص ہی نہیں تھا.
صدر روحانی نے کہا کہ امریکہ نےہمیشہ جوہری معاہدے سے متعلق جھوٹ بولا ہے.
یاد رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک بار پھر ایران اور جوہری معاہدے کے خلاف پرانے الزامات کو دہرا کر اس معاہدے سے امریکہ کی علیحدگی کا اعلان کردیا.
ڈاکٹر روحانی نے مزید کہا کہ عالمی جوہری ادارے کی متعدد رپورٹس کے مطابق ایران اپنی ذمے داریوں پر عمل کیا جبکہ آج ہمیں یہ نظرآرہا ہے کہ کونسا فریق یا ملک اس معاہدے کی خلاف ورزی کا مرتکب ہورہا ہے.
انہوں نے کہا کہ ایران جوہری معاہدے کوئی یکطرفہ یا دوطرفہ معاہدہ نہیں تھا جس سے امریکہ نکل جائے بلکہ یہ معاہدہ ایک عالمی معاہدہ ہے.
ایرانی صدر نے مزید کہا کہ ہماری قوم نے دیکھا کہ آج ایک ہی ناجائز ریاست نے ٹرمپ کے فیصلے کا خیرمقدم کیا اور وہ صرف ناجائز صہیونی ریاست ہی ہے اور یہ وہی ناجائز ریاست ہے جس نے ایران کے جوہری سائنسدانوں کو شہید کیا اور آئے روز مظلوم فلسطینی عوام پر انسانیت سوز مظالم ڈھا رہی ہے.
ایرانی صدر نے کہا کہ آج کے بعد جوہری معاہدے گروپ 1+5 کے درمیان نہیں بلکہ ایران اور صرف 5 ممالک کے درمیان رہے گا اور اب ہم نے دیکھنا ہے کہ دیگر فریقین اپنی ذمے داریوں کو کس طرح نبھائیں گے.
ڈاکٹر روحانی نے مزید کہا کہ انہوں نے تین یورپی ممالک سمیت چین اور روس کے ساتھ مذاکرات اور مشاورت کرنے کے لئے دفترخارجہ کے حکام کو خصوصی احکامات جاری کردئے ہیں. اگر طے شدے معیاد تک اچھے نتائج پر پہنچ گئے تو 5 ممالک کے تعاون سے ایرانی قوم کی خواہش کے مطابق جوہری معاہدے کے نفاذ میں اپنا کردار ادا کرتے رہیں گے.
ڈونلڈ ٹرمپ نے گزشتہ روز اپنے ٹوئٹر پیغام کے ذریعے اعلان کیا تھا کہ وہ آج رات ایران جوہری معاہدے پر حتمی فیصلے کا اعلان کریں گے.
ٹرمپ نے آج رات ایران کے خلاف پرانی ہرزہ سرائیوں کو دہراتے ہوئے کہا کہ وہ ایران پر دوبارہ پابندیاں لگانے کے حکم نامے پر دستخط کریں گے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@