یورپی یونین کا ایران جوہری معاہدے کے مکمل نفاذ پر زور

ویانا، 8 مئی، ارنا - یورپی یونین سمیت جرمنی، فرانس اور برطانیہ نے بروسلز میں نائب ایرانی وزیر خارجہ کے ساتھ ایک مشترکہ نشست میں جوہری معاہدے کی حمایت کرتے ہوئے اس کے مکمل نفاذ پر زور دیا ہے.

یورپی یونین کے شعبہ خارجہ پالیسی کے ترجمان کے مطابق، ایران جوہری معاہدے سے متعلق مشاورتی نشست کا آج بروز منگل بروسلز انعقاد کیا گیا جس میں یورپی یونی کی خاتون نمائندہ سمیت، جرمنی، فرانس اور برطانوی حکام اور نائب ایرانی وزیر خارجہ 'سید عباس عراقچی' نے شرکت کی.
اس بیان میں مزید کہا گیا کہ یورپی یونین کی خارجہ پالیسی ایکشن سروس کی سیکریٹری جنرل 'ہیلگا اشمید' نے اس نشست کی صدارت کی جس میں تمام فریقین نے ایران جوہری معاہدے کی مکمل حمایت کا اعلان کرتے ہوئے تمام فریقین سے مطالبہ کیا گیا کہ اس کے مکمل نفاذ کو یقینی بنائیں.
یہ بات قابل ذکر ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ نے 12 مئی کو ایران کے ساتھ جوہری معاہدے کی توثیق کرنے یا نہ کرنے کا فیصلہ کرنا تھا مگر انہوں نے گزشتہ رات اپنے ایک ٹوئٹر پیغام میں کہا کہ وہ آج اپنے حتمی فیصلے کا اعلان کریں گے.
دریں اثناء اعلی ایرانی قیادت نے اس عزم کا اعادہ کیا ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ کی ممکنہ علیحدگی پر بھرپور ردعمل دیا جائے جس میں ایران کی بھی جوہری معاہدے سے علیحدگی اور این پی ٹی معاہدے سے نکلنا شامل ہیں.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@