ایران جوہری معاہدے کی بھر پور حمایت کرتے ہیں: آسٹرین مندوب

نیو یارک، 8 مئی، ارنا – اقوام متحدہ میں آسٹریا کے مستقل مندوب نے ایران جوہری معاہدے سے اپنا ملک کی بھرپور حمایت پر زور دیتے ہو‏ئے کہا ہے کہ ایران اور عالمی قوتوں کے درمیان طے پانے والا جوہری معاہدہ دوطرفہ جیت پر مبنی اور اس کے دوسرے 6 فریقین کو اس پر پابند رہنا چاہیے.

یہ بات 'یان کیکرت' نے آج بروز منگل ارنا کے نمائندے کے ساتھ انٹرویو دیتے ہو‏ئے کہی.

انہوں نے کہا کہ آسٹریا، جوہری معاہدے سے امریکہ کی ایک طرفہ علیحدگی کی صورت میں جمہوریہ اسلامی کے ردعمل کا انتظار کرے گا.

آسٹریا‏ئی عھدیدار نے کہا کہ جوہری معاہدے کی پاسداری تمام فریقین پر لازم ہوتی ہے لیکن اگر اس معاہدے کے ایک فریق اپنے وعدوں پرعمل نہ کرے تو جوہری معاہدے کا نفاذ سخت ہوجائے گا.

یہ بات قابل ذکر ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ نے 12 مئی کو ایران کے ساتھ جوہری معاہدے کی توثیق کرنے یا نہ کرنے کا فیصلہ کرنا تھا مگر انہوں نے گزشتہ رات اپنے ایک ٹوئٹر پیغام میں کہا کہ وہ آج اپنے حتمی فیصلے کا اعلان کریں گے.

دریں اثناء اعلی ایرانی قیادت نے اس عزم کا اعادہ کیا ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ کی ممکنہ علیحدگی پر بھرپور ردعمل دیا جائے جس میں ایران کی بھی جوہری معاہدے سے علیحدگی اور این پی ٹی معاہدے سے نکلنا شامل ہیں.

9410٭274٭٭

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@