ایران جوہری معاہدے کا تحفظ ہماری ترجیح ہے: فرانس

نیو یارک، 7 مئی، ارنا - اقوام متحدہ میں تعینات فرانس کے مستقل مندوب نے کہا ہے کہ ایران جوہری معاہدے کو بچانا پیرس حکومت کی خواہش اور اولین ترجیح ہے.

یہ بات 'فرانسس دیلٹرے' نے ارنا نیوز ایجنسی کے نمائندے کے ساتھ خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہی.
اس موقع پر انہوں نے کہا کہ خطے اور دنیا میں امن و سلامتی کی بالادستی کو قائم رکھنے کے لئے ایران جوہری معاہدہ ایک تعمیری روش ہے.
فرانسیسی صدر کے حالیہ دورہ امریکہ اور ڈونلڈ ٹرمپ کے ساتھ ہونے والے مذاکرات کے نتائج پر تبصرہ کرتے ہوئے فرانسیسی مندوب نے مزید کہا کہ فرانسیسی صدر نے اپنے امریکی ہم منصب کے علاوہ ایرانی صدر کے ساتھ بھی ٹیلی فونک رابطے میں جوہری معاہدے پر طویل گفتگو کی جس یہ بات ظاہر ہوتی ہے کہ فرانس، جوہری معاہدے کے نفاذ پر سنجیدہ ہے.
انہوں نے ایران جوہری معاہدے سے امریکہ کی ممکنہ علیحدگی سے متعلق فرانس حکومت کے مؤقف کے حوالے سے کہا کہ ایران جوہری معاہدے کو بچانا پیرس حکومت کی اولین ترجیح ہے.
یہ بات قابل ذکر ہے کہ اگر ڈونلڈ ٹرمپ 12 مئی تک ایران کے ساتھ جوہری معاہدے کی دوبارہ توثیق نہیں کرتے تو پھر ایران کے خلاف پابندیاں دوبارہ لاگو ہو جائیں گی.
صدر ٹرمپ نے 12 مئی کی تاریخ اس لئے مقرر کی ہے تا کہ یورپی ممالک ایران کے ساتھ بقول اُن کے جوہرے معاہدے میں موجود خرابیوں کو دور کر لیں.
دریں اثناء اعلی ایرانی قیادت نے اس عزم کا اعادہ کیا ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ کی ممکنہ علیحدگی پر بھرپور ردعمل دیا جائے جس میں ایران کی بھی جوہری معاہدے سے علیحدگی اور این پی ٹی معاہدے سے نکلنا شامل ہیں.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@