رکن امریکی کانگریس نے ایران جوہری معاہدے سے نکلنے پر انتباہ کردیا

تہران، 7 مئی، ارنا - ری پبلکن پارٹی سے تعلق رکھنے والے امریکی کانگریس کے سنیئر رکن نے ڈونلڈ ٹرمپ کو انتباہ کردیا ہے کہ وہ ایران جوہری معاہدے سے نکلنے کی بڑی غلطی کا مرتکب نہ ہوں.

رائٹرز نیوز ایجنسی کے مطابق، سینٹر 'میک تورن بیری' نے ڈونلڈ ٹرمپ کو متنبہ کیا ہے کہ ایران جوہری معاہدے سے علیحدگی امریکہ کو اس کے یورپی اتحادیوں سے دور کرے گی.
انہوں نے ٹرمپ کی ممکنہ علیحدگی کو بڑی غلطی قرار دیتے ہوئے ایران جوہری معاہدے کو بچانے پر زور دیا ہے.
سنیئر امریکی رکن کانگریس نے مزید کہا کہ جب ایران کے ساتھ یہ معاہدہ طے پایا جارہا تھا تو میں اس کی مخالفت کرتا تھا مگر موجودہ صورتحال میں امریکہ کے لئے اس سے علیحدگی میں کوئی فائدہ نہیں ہے.
انہوں نے ٹرمپ انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ وہ ایران جوہری معاہدے سے متعلق یورپی ممالک کے ساتھ تعاون کو جاری رکھے.
یہ بات قابل ذکر ہے کہ اگر ڈونلڈ ٹرمپ 12 مئی تک ایران کے ساتھ جوہری معاہدے کی دوبارہ توثیق نہیں کرتے تو پھر ایران کے خلاف پابندیاں دوبارہ لاگو ہو جائیں گی.
صدر ٹرمپ نے 12 مئی کی تاریخ اس لئے مقرر کی ہے تا کہ یورپی ممالک ایران کے ساتھ بقول اُن کے جوہرے معاہدے میں موجود خرابیوں کو دور کر لیں.
دریں اثناء اعلی ایرانی قیادت نے اس عزم کا اعادہ کیا ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ کی ممکنہ علیحدگی پر بھرپور ردعمل دیا جائے جس میں ایران کی بھی جوہری معاہدے سے علیحدگی اور این پی ٹی معاہدے سے نکلنا شامل ہیں.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@