چینی سمندر میں ایرانی جہاز سانحے کی وجہ انسانی غلطی

تہران، 5 مئی، ارنا – چینی سمندر میں تباہ ہونے والے ایرانی تیل بردار جہاز سانچی کی تحقیقاتی کمیٹی کے سربراہ نے کہا ہے کہ یہ حادثہ انسانی غلطی کی وجہ سے ہوا.

یہ بات 'نادر پسندیدہ' نے ہفتہ کے روز ایرانی آئل ٹینکر سانچی کے سانحے پر ہونے والی مشترکہ تحقیقات کے نتائج کے حوالے سے صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.

انہوں نے مزید کہا کہ سانچی جہاز کے سانحے کی وجہ قابل گریز انسانی غلطی تھی.

ایرانی عہدیدار نے کہا کہ ایران سمیت پاناما اور بنگلہ دیش نے بھی اس نتیجے پر پہنچ گئے کہ چینی مال بردار جہاز نے اپنے رخ اچانک بدل دیا جس کی وجہ سے یہ سانحہ پیش آیا.

یاد رہے کہ رواں سال کے 6 جنوری کو چین کے مشرقی سمندر میں حادثے کا شکار ہونے والا ایرانی آئل ٹینکر 14 جنوری کو ڈوب گیا.

تیل بردار جہاز 'سانچی' چھ جنوری کو چین کے ایک مال بردار جہاز کے ساتھ ٹکرا گیا تھا جس کے بعد اس میں خوفناک آگ بھڑک اٹھی.

سانچی آئل ٹینکر میں عملے کے 32 افراد سوار تھے جن میں 30 ایرانی اور 2 بنگلہ دیشی باشندے تھے.

9393*274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@