امریکی پالیسیاں دنیا میں عدم استحکام کا باعث ہیں: ایران

تہران، 4 مئی، ارنا - اعلی ایرانی سفارتکار نے کہا ہے کہ بعض عالمی طاقتوں بالخصوص امریکہ کے جبر اور غنڈہ گردی پر مبنی پالیسی علاقائی اور عالمی عدم استحکام اور بدامنی کی اصل وجہ ہے.

یہ بات نائب ایرانی وزیرخارجہ برائے قانونی اور بین الاقوامی 'غلام حسین دہقانی' نے تاجکستان کے وزیر خارجہ 'سراج الدین اصل اوف' کے ساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کہی.
یہ ملاقات تاجک دارالحکومت دوشنبے میں بین الاقوامی انسداد دہشتگردی اور انتہاپسندی کانفرنس کے موقع پر ہوئی.
اس موقع پر اعلی ایرانی سفارتکار نے جوہری معاہدے کی حالیہ تبدیلیوں پر اسلامی جمہوریہ ایران کے مؤقف پر روشنی ڈالی.
انہوں نے مزید کہا کہ بعض عالمی قوتیں بشمول امریکہ کی جبر اور استحصال پر مبنی پالیسیوں سے آج خطہ اور دنیا بدامنی اور عدم استحکام کا شکار ہیں جس سے خطرناک نتائج برآمد ہوں گے.
انسداد دہشتگردی اور انتہاپسندی کی روک تھام کے حوالے سے ایران کے موثر تجربات کا ذکر کرتے ہوئے غلام حسین دہقانی نے کہا کہ ایران اس مقصد کے لئے تاجکستان سمیت دیگر علاقائی ممالک کے ساتھ تعاون کے لئے آمادہ ہے.
فریقین نے افغانستان کی ابتر صورتحال اور وہاں داعش کے دہشتگردوں کی منتقلی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے دہشتگردی کے خلاف خطی ممالک کے درمیان تعاون پر زور دیا.
تاجک وزیر خارجہ نے ایران کی ترقی اور خوشحالی پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ایران کی فتح کو اپنی فتح سمجھتے ہیں.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@