مراکش کی پولیساریو فرنٹ نے ایران سے امداد لینے کے الزام کو مسترد کردیا

الجیریا، 2 مئی، ارنا - مراکش نے ملک کی جماعت پولیساریو فرنٹ کو امداد دینے کے الزام میں اسلامی جمہوریہ ایران کے ساتھ سفارتی تعلقات ختم کردئے جبکہ پولیساریو فرنٹ نے اس الزام کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ اس کا ایران کے ساتھ کسی بھی طرح کا تعاون نہیں ہے.

پولیساریو فرنٹ کے ترجمان 'محمد حداد' نے مراکش حکومت کے الزام کی تردید کرتے ہوئے ملکی حکام سے مطالبہ کیا کہ وہ اپنے دعوے کا ثبوت پیش کریں.

انہوں نے کہا کہ اگر پولیساریو فرنٹ اور ایران کے درمیان کسی بھی طرح کے تعلقات کا ثبوت ہے تو مراکش حکومت کو چاہئے کہ وہ سامنے لائے.

محمد حداد نے مزید کہا کہ مراکش حکومت کے الزامات کا مقصد صحرائے صحارا کے مسئلے پر مذاکرات سے راہ فرار اختیار کرنا ہے جبکہ اقوام متحدہ نے بھی اس حالے سے مذاکرات کرانے کا مطالبہ کر رکھا ہے.

یاد رہے کہ مراکش نے ایران پر علیحدگی پسندوں کی حمایت اور مدد کے الزام پر سفارتی تعلقات توڑدیے ہیں.

مراکشی وزیر خارجہ ناصر بوریطہ نے ایران اور لبنانی تنظیم حزب اللہ پر علیحدگی پسند گروپ پولیساریو فرنٹ کے جنگجوؤں کو تربیت اور اسلحہ فراہم کرنے کا الزام عائد کیا ہے.

پولیساریو فرنٹ مغربی صحرا میں آباد صحراوی قوم کی مراکش سے آزادی کی گوریلا جنگ لڑ رہا تھا.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@