ایران قازقستان کو خلیج فارس کے ممالک، پاکستان اور بھارت سے منسلک کرنے کیلئے ایک مناسب کوریڈور ہے: قازقستانی تجزیہ کار

باکو، 31 دسمبر، ارنا – ایک قازقستانی تجزیہ کار برائے وسطی ایشیا کے امور نے اسلامی جمہوریہ ایران اور قازقستان کے درمیان اقتصادی تعلقات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ ایران خلیج فارس سے منسلک ہونے کی وجہ سے قازقستان، خلیج فارس کے عرب ممالک، پاکستان اور بھارت کے درمیان ایک مناسب کوریڈور ہوسکتا ہے.

یہ بات 'میثم آرائی درونکلا' نے اتوار کے روز ارنا کے نمائندے کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ قازقستان بھی اسلامی جمہوریہ ایران، چین، روس، ازبکستان، ترکمانستان اور تاجکستان کے درمیان ایک اقتصادی پل کی طرح کردار ادا کرسکتا ہے.

درونکلا نے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان اقتصادی تعلقات کو فروغ دینے کے لئے مشترکہ صلاحیتوں سے استعمال کرنا چاہیئے.

انہوں نے مزید کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران اور قازقستان کے درمیان مشترکہ دین، مذہب، ثقافت اور زبان قائم ہیں تو یہ مشترکات مختلف قوموں کے درمیان باہمی تعلقات کی ترقی کے لئے بہت ہی موثر ہیں.

انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان کثیرالجہتی تعلقات کی توسیع دینے کے لئے اقتصادی اور سیاسی تعلقات پر اہمیت دینا اور دونوں قوموں کی مہاجروں کی سہولیات فراہم کرنا ناگزیر ہے.

قازقستان کے تجزیہ نگار نے دونوں ممالک کے درمیان سیاسی تعلقات کو اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ آستانہ میں شامی بحران کے حل کے حوالے سے منعقدہ نشستوں کی بنا پر قازقستان اسلامی جمہوریہ ایران، روس اور ترکی کے درمیان سیاسی تعلقات کی مضبوطی کا خواہاں ہے.

انہوں نے کہا کہ خوش قسمتی سے دونوں ممالک کے درمیان کثیرالجہتی تعلقات بڑھانے کے لئے کوئی رکاوٹیں موجود نہیں ہیں.

9393**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@