قائد انقلاب کے فرمان کے مطابق، دشمنوں کی سازشوں سے ہوشیار رہنا ہوگا: ایرانی صدر

تہران، 28 دسمبر، ارنا - ایران کے صدر نے خطے اور دنیا میں وطن عزیز کی مضبوط پوزیشن کا ذکر کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا ہے کہ قائد اسلامی انقلاب کی حالیہ ہدایات کے مطابق ہمیں ہر حال میں ایران خلاف دشمنوں کی سازشوں سے ہوشیار رہنا ہوگا.

ان خیالات کا اظہار صدر مملکت ڈاکٹر 'حسن روحانی' نے جمعرات کے روز تہران میں اقتصادیات امور پر منعقدہ ایک اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے کیا.

اس موقع پر انہوں نے سپریم لیڈر حضرت آیت اللہ العظمی 'سید علی خامنہ ای' کے گزشتہ روز کے بیانات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ قائد انقلاب نے اپنے فرمان میں ملکی حکام، ماہرین اور میڈیا کو مخطاب کیا.

صدر روحانی نے مزید کہا کہ آج انقلابی جذبے کا اصل پہلو تفریق کے خاتمے، امید کی فضا میں اضافے اور ملکی ترقی اور خوشحالی میں شراکت داری کرنا ہے.

انہوں نے کہا کہ خطے اور دنیا میں ایران کی مضبوط پوزیشن کو دیکھتے ہوئے دشمن ہماری عوام کو مایوس بالخصوص نظام اور معاشرے کے درمیان خلیج پیدا کرنا چاہتا ہے تاہم ان تمام سازشوں کے خلاف معاشرے بالخصوص ماہرین اور نوجوان نسل کو ہوشیار رہنا ہوگا.

ایرانی صدر نے اس بات پر زور دیا کہ نظام کی اندرونی مضبوطی اور ملک کی تیزی سے ترقی کے لئے قومی یکجہتی ناگزیر ہے جبکہ حکام اور اداروں کے درمیان کسی بھی طرح کے اختلافات ہمارے مستقبل کے لئے خطرہ ہوگا جس سے ملک دشمنوں کو بھی موقع ملے گا.

انہوں نے مزید کہا کہ حکومت قائد انقلاب کی ہدایات اور عوامی حمایت کے ذریعے ملک میں مزاحمتی اقتصادی پالیسی کے نفاذ کو جاری رکھے گی جس کا اصل مقصد ملک میں پیداوار اور روزگار کے مواقع میں اضافہ کرنا ہے.

صدر روحانی نے اس بات پر زور دیا کہ عوام کو درپیش اقتصادی اور معاشی مسائل کا حل حکومت کی اہم اور اولین ترجیح ہے.

انہوں نے کہا کہ تیل پر انحصار میں کمی کرتے ہوئے اقتصادی سفارتکاری کو فروغ دیں گے جس سے ملکی برآمدات، پیداوار اور روزگار کے مواقع میں اضافہ ہوگا.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@